حکومت کا تحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے، آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ

حکومت کا تحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے، آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(جاوید اقبال)حکومت نے سابق حکومت کے عہدے داران سابق وزیراعظم اور وزراء  اور پارٹی قیادت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کیا ہے اس پالیسی کے تحت حکمرانوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا ذرائع نے بتایا ہے کہ حکومت نے فیصلہ کیا ہے ثابت کا حکومت کے ذمہ داران کو ٹف ٹائم دیا جائے گا اور پی ٹی آئی نے مئی کے آخری ہفتے میں اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کیا اس دوران پی ٹی آئی نے قانون کو ہاتھ میں لیا تو اہنی ہاتھون سے لگتا جائے گا اس کے لیے لانگ مارچ سے قبل متحرک رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریاں  عمل میں آ سکتی ہیں قیادت کو ان کے گھروں میں نظر بند کیا جا سکتا ہے یہ بھی بتایا ہے کہ حکومت نے یہ بھی فیصلہ کیا ہے کہ سابق حکمرانوں کی کرپشن کو سامنے لایا جائے بعض رہنماؤں کے سیکس سکینڈل بھی سامنے لائے جائیں گے اور کرپشن کے اہم کیسز بھی  ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت تک خفیہ طور پر سب کو حکمرانوں کے اہم ترین وہ وزراہ اور سابق وزیراعظم کے قریبی دوستو ن جن کی تعداد پٹھان 30 کے قریب ہے کے اثاثہ جات یہ چھان بین خفیہ طور پر شروع کی گئی ہے ایسی قومیں جائیدادیں جنہیں نیلام کیا گیا یہ جائیدادیں جن کے نام پر خریدی گئی اور کتنی مارکیٹ ریٹ سے سستی خریدی گئی اس کی بھی چھان بین کا سلسلہ شروع ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے سابق  وزیراعظم کی خفیہ آڈیو ویڈیو بھی سامنے لانے کا فیصلہ کیا ہے رائے کا کہنا ہے کہ اس کا مقصد عوامی اس رائے کو تبدیل کرنا ہے جس میں کہا جا رہا ہے کہ سابق وزیراعظم پر کرپشن کا کوئی الزام نہیں ہے بھائی نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومت کے ساتھ سابق وزیراعظم کی ایسی گفتگو کی ٹیپ لگی ہیں اس میں سابق وزیر اعظم لین دین کرتے ہوئے نظر آتے ہیں اس کی تصدیق حکومت کے ایک اھم ذمہ دار نے کی ہے جس کا دعوی ہے کہ حکومت کے ہاتھ  سابق وزیراعظم ان کے بعض قریبی دوستوں اور سابق وزراء  کی خفیہ آڈیو ویڈیوز مل چکی ہے جس میں ان کی کرپشن کے ثبوت موجود ہیں انہیں بہت جلد عوام کے سامنے لایا جائے گا۔
نمٹنے کا فیصلہ

مزید :

صفحہ اول -