خطرناک ڈکیت گروہ کا سرغنہ گرفتار، ڈھائی لاکھ روپے برآمد

خطرناک ڈکیت گروہ کا سرغنہ گرفتار، ڈھائی لاکھ روپے برآمد

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور (کرائم رپورٹر) تھانہ چمکنی پولیس نے نواحی علاقوں میں سرگرم خطرناک راہزن گروہ کے سرغنہ اور مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزم غز چوک میں واقع جنرل سٹور میں اپنے دیگرساتھیوں کے ہمراہ اسلحہ کی نوک پر ڈکیتی کرنے کے بعد فرار ہو رہا تھا کہ قریبی پولیس پارٹی نے تعاقب کرتے ہوئے مقامی افراد کی مدد سے گروہ کے سرغنہ اور مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا، گرفتار ملزم کا تعلق بڈھ بیر برھان خیل سے ہے جس نے ڈکیتی کے دوران جنرل سٹور مالک پر فائرنگ بھی کی تھی، ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران دیگر وارداتوں کا بھی انکشاف کرتے ہوئے شریک ساتھیوں کے نام بھی اگل دئیے ہیں جن کی گرفتاری کے لئے خصوصی ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے، ملزم کے قبضہ سے لوٹی گئی رقم ڈیڑھ لاکھ روپے نقد اور مختلف وارداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ اور موٹر سائیکل بھی برآمد کر لیا گیا ہے جس سے دوران تفتیش مزید اہم انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے تفصیلات کے مطابق تھانہ پھندو پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ پھندو غز چوک کے ایک جنرل سٹور میں چند مسلح افراد گھس کر اسلحہ کی نوک پر ڈکیتی کر رہے ہیں جنہوں نے جنرل سٹور مالک پر فائرنگ بھی کی ہے جس پر ایس ایچ او تھانہ چمکنی ہارون جدون اور غلام حیدر سب انسپکٹر جو علاقہ میں معمول کی گشت پر موجود تھے فوری موقع پر پہنچے جس پر ڈکیت گروہ پولیس کو دیکھتے ہی فرار ہونے لگے جن کا تعاقب شروع کرتے ہوئے دیگر راہ رندگان اور مقامی افراد کی مدد سے ملزمان میں سے ایک ملزم کے فرار کی کوشش ناکام بناتے ہوئے دھر لیا ہے جس کی شناخت حنیف ولد خان میر کے نام سے ہوئی ہے جو نواحی علاقہ بڈھ بیر برھان خیل کا رہائشی ہے، ملزم نے ابتدائی تفتیش کے دوران متعدد وارداتوں کا انکشاف کرتے ہوئے پورے نیٹ ورک کی نشاندہی کی ہے جن کی گرفتاری کیلئے ڈی ایس پی چمکنی طیب جان کی سربراہی میں خصوصی ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے، گرفتار ملزم سے ابتدائی طور پر دو مختلف وارداتوں کے دوران چھینے گئے ڈھائی لاکھ روپے نقد، اسلحہ اور موٹر سائیکل بھی برآمد کر لیا گیا ہے، ملزم سے دوران تفتیش مزید اہم انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے