ڈبلیو ایچ او کے کورونا سے متعلق اعدادو شمار درست نہیں، مفروضات پر مبنی ہیں،ڈاکٹر فیصل سلطان 

ڈبلیو ایچ او کے کورونا سے متعلق اعدادو شمار درست نہیں، مفروضات پر مبنی ...
ڈبلیو ایچ او کے کورونا سے متعلق اعدادو شمار درست نہیں، مفروضات پر مبنی ہیں،ڈاکٹر فیصل سلطان 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے کہ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے جواعدادو شمار جاری کیے ہیں وہ درست نہیں صرف مفروضات پر مبنی ہے یہ ڈیٹا کورونا سے اموات کی حقیقی گنتی پر مشمل نہیں ہے ۔
نجی  ٹی وی چینل" جیو نیوز" سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں کہیں بھی اگر ایسی ایمرجنسی کی صورتحال بن جائے تو وہاں سے 100فیصد درست ڈیٹا حاصل کرنا نا ممکن ہے ،اگر کوئی چھوٹا ساملک ہو تو وہاں سے شائد آپ صحیح ڈیٹا لے لیں ورنہ جس ملک کی آبادی ہی کروڑوں میں ہو وہاں ڈیٹا حاصل کرنے میں 10سے 20فیصد تک غلطی کا امکان موجود ہوتا ہے لیکن پاکستان کیلئے یہ کہنا ہے کہ 8گنا تعدادکم بتائی یہ نا ممکن ہے ۔ہم نے اپنے ہسپتالوں کے اعدادو شمار کو ری چیک کرنے کیلئے قبرستانوں کے ریکارڈ کو بھی چیک کیا کراچی میں 203قبرستان ہیں جن میں سے ہم نے 36 قبرستانوں کے سیمپل لیے اسی طرح لاہور میں 90قبرستان ہیں جن میں سے 7کا ڈیٹا سیمپل لیا اور ان کو اپنے ڈیٹا سے میچ کیا جو کہ  درست تھا ۔
قبرستانوں کے اعدادو شمار چیک اس لیے کیے گئے کیونکہ بہت سے ترقی یافتہ ممالک کوپریشانی ،حیرت اور تعجب تھا کہ پاکستان کیسے اس وباءسے بچ رہا ہے اور کیسے اسے کنٹرول کر رہا ہے۔ ہم تو پہلے ہی اس وبا کو لیکر بہت سنجیدہ تھے اس لیے جب ایسی باتیں سامنے آنا شروع ہوئیں تو ہم نے اپنے ڈیٹا کو ری چیک کرنے کیلئے قبرستانوں کے ریکارڈ کو چیک کیا اور ایسا ہم نے ایک بار نہیں بلکہ2 بار کیا ۔ اس لیے ڈبلیو ایچ او کے اعدادو شمار کسی صورت درست نہیں ہیں ۔