کیمبرج سٹی کی پاکستانی نژاد امریکی مئیر سنبل صدیقی کی منفرد پالیسیاں ، "مینٹل ہیلتھ آگاہی مہم" کیلئے کیمبرج سٹی ہال کی تاریخی عمارت کو سجا دیا گیا

کیمبرج سٹی کی پاکستانی نژاد امریکی مئیر سنبل صدیقی کی منفرد پالیسیاں ، ...
کیمبرج سٹی کی پاکستانی نژاد امریکی مئیر سنبل صدیقی کی منفرد پالیسیاں ،

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک (طاہر محمود چوہدری سے) یہ امریکی ریاست میساچوسٹس میں واقع کیمبرج سٹی ہال کی تاریخی عمارت کی تصویر ہے، جسے مئی کے مہینے میں "منٹل ہیلتھ آگاہی مہم" کے سلسلے میں دلکش سبز روشنی سے سجادیا گیا ہے. یہ خوبصورت تصویر کیمبرج سٹی کی پاکستانی نژاد-امریکی مئیر سنبل صدیقی نے اپنے ٹوئیٹر ہینڈل اور فیس بک پیج پر شئیر کی ہے. 

سنبل صدیقی بطور مئیر کیمبرج سٹی کو مزید منصفانہ اور شہری طور پر منسلک کمیونٹی بنانے کے لیے دلجمعی سے آگے بڑھ رہی ہیں. سنبل صدیقی کا کہنا ہے کہ "ان کی صلاحیتیں، کمیونٹی کی وکالت میں تجربہ، اور کیمبرج کی رہائشی کا پس منظر انہیں کیمبرج کی سیاست پر ایک مستند اور منفرد نقطہ نظر فراہم کرتا ہے." 

کیمبرج سٹی کونسل کی تاریخ کی پہلی مسلمان مئیر سنبل صدیقی 2سال کی عمر میں اپنے جڑواں بھائیوں کے ہمراہ والدین کے ساتھ کراچی سے امریکہ آئی تھیں. وہ کیمبرج میں پلی بڑھیں، یہیں سے ہائی سکول کیا. سنبل صدیقی نے براؤن یونیورسٹی، نیو جرسی سے پبلک پالیسی اور امریکن انسٹی ٹیوشنز میں بیچلرز، جبکہ لاء کی ڈگری انہوں نے نارتھ ویسٹرن پرٹزکر سکول آف لاء سے حاصل کر رکھی ہے. سنبل صدیقی نے کچھ عرصہ بطور اٹارنی کام کیا. پھر پبلک سیکٹر میں کچھ عرصہ ملازمت کے بعد سیاست میں آ گئیں. کیمبرج سٹی  کونسل میں سنبل صدیقی کی یہ تیسری ٹرم ہے. وہ 2020ء سے بطور مئیر  کام کر رہی ہیں. 

کئی سال پہلے کیمبرج سٹی کا نام معروف برطانوی کیمبرج  یونیورسٹی کی یاد میں رکھا گیا تھا. اس شہر کی اہمیت اس وجہ سے اور بھی بڑھ جاتی ہے کہ دنیا کے معروف تعلیمی ادارے جیسے، ہارورڈ یونیورسٹی، دی میساچوسٹس انسٹیٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (ایم آئی ٹی)، لسزلی یونیورسٹی اور ہالٹ انٹرنیشنل بزنس سکول کیمبرج سٹی میں واقع  ہیں.