سگریٹ نوشی کرنیوالوں کیلئے نئی پریشانی، ڈیوٹی بڑھانے کی سفارش کردی گئی 

سگریٹ نوشی کرنیوالوں کیلئے نئی پریشانی، ڈیوٹی بڑھانے کی سفارش کردی گئی 
سگریٹ نوشی کرنیوالوں کیلئے نئی پریشانی، ڈیوٹی بڑھانے کی سفارش کردی گئی 
سورس: Pixabay.com (creative commons license)

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی ٹیکس محتسب نے سگریٹ اور مشروبات پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی بڑھانے کی سفارش کر دی۔ نیوز ویب سائٹ ’پرو پاکستانی‘ کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر)کو وفاقی ٹیکس محتسب آفس کی طرف سے بجٹ 2022-23ءکے لیے تجاویز موصول ہو گئی ہیںجن میں کہا گیا ہے کہ ملک میں فروخت ہونے والی سگریٹس پر مخصوص ایکسائز ڈیوٹی عائد کی گئی ہے۔ کم قیمت سگریٹس پر یہ ڈیوٹی ریٹیل پرائس کا 42.6فیصد اور مہنگے سگریٹس پر ریٹیل پرائس کا 59.8فیصد ہے۔ 

 وفاقی ٹیکس محتسب کی طرف سے کہا گیا ہے کہ وسیع تر قومی مفاد میں وفاقی حکومت شوگری مشروبات، انرجی ڈرنکس وغیرہ پرعائد ایکسائز ڈیوٹی میں بھی ریٹیل پرائس کا 13فیصد سے 20فیصد تک اضافہ کر سکتی ہے۔روزنامہ نوائے وقت کے مطابق وفاقی حکومت کی طرف سے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں سگریٹ اور مشروبات پر ہیلتھ ٹیکس لگانے کی بھی منظوری دے دی ہے۔ ان اشیاءپر ہیلتھ ٹیکس لاگو کرنے کی سفارش وزارت صحت کی جانب سے کی گئی تھی۔ ممکنہ طور پر 20سگریٹ والے پیکٹ پر 10روپے جبکہ مشروبات کے 250ملی لیٹر پیک پر 1روپیہ ہیلتھ ٹیکس عائد کیا جا رہا ہے۔ ان دونوں اشیاءپر ہیلتھ ٹیکس لاگو ہونے سے ایک تخمینے کے مطابق حکومت کو سالانہ 38ارب روپے کی آمدن ہو گی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -