کب کتنی گندم درآمد ہوئی؟ ابتدائی تحقیقات سے وزیراعظم کو آگاہ کر دیا گیا

کب کتنی گندم درآمد ہوئی؟ ابتدائی تحقیقات سے وزیراعظم کو آگاہ کر دیا گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 اسلام آباد/لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک، این این آئی)وزیراعظم محمد شہباز شریف کو گندم درآمد تحقیقات کی ابتدائی تفصیلات سے آگاہ کردیا گیا،سیکرٹری کابینہ ڈویژن، سیکرٹری خوراک نے ابتدائی تحقیقات سے وزیراعظم کو آگاہ کیا۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اگست 2023 سے مارچ 2024 تک 330 ارب روپے کی گندم درآمد کی گئی، 13 لاکھ میٹرک ٹن گندم میں کیڑے پائے گئے، پی ڈی ایم گورنمنٹ نے جولائی2023 میں گندم درآمد پر فیصلہ معلق رکھا تھا۔نگراں دور حکومت میں 250 ارب روپے کی28 لاکھ   میٹرک ٹن گندم درآمد کی گئی، موجودہ حکومت میں 80 ارب روپے کی7 لاکھ میٹرک ٹن گندم پاکستان پہنچی، مجموعی طور پر گندم درآمد کیلئے ایک ارب 10 کروڑ ڈالر بیرون ملک گئے۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ اکتوبر 2023 میں ساڑھے 4 لاکھ 25 ہزار میٹرک ٹن گندم درآمد کی گئی،  نومبر2023 میں 5 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کی گئی،  ساڑھے 3 لاکھ 35 ہزار میٹرک ٹن گندم دسمبر 2023 میں درآمد کی گئی، جنوری 2024 میں 7 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کی گئی، فروری2024 میں ساڑھے 8 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کی گئی۔گندم کے 70 جہاز 6 ممالک سے درآمد کیے گئے، پہلا جہاز پچھلے سال 20 ستمبر کو اور آخری جہاز رواں سال 31 مارچ کو پاکستان پہنچا، باہر سے  گندم 280 سے 295 ڈالر فی میٹرک ٹن درآمد کی گئی، وزارت خزانہ نے نجی شعبے کے ذریعے صرف  10 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کی اجازت دی تھی۔دوسری طرف وفاقی حکومت ملک سے چینی کی برآمد سے متعلق آئندہ ہفتے دوبارہ جائزہ لے گی،شوگر ملز ایسوسی کی جانب سے چینی کی سفارش سے متعلق غور ہوگا،ذرائع نے بتایا کہ شوگر ایڈوائزری بورڈ نے ملز ایسوسی سے قیمتوں سے متعلق یقین دہانی مانگی تھی تاہم ایسوسی ایشن نے تاحال قیمتوں میں استحکام سے متعلق یقین دھانی نہیں کروائی،قیمتوں میں استحکام نہ آنے پر چینی برآمد نہ کرنے کی تجویز دی گئی تھی۔وفاقی وزیر رانا تنویر حسین نے کہا کہ ملک میں چینی کے زخائر سرپلس ہیں،چینی ذخائر سرپلس ہیں تو برآمد کی اجازت پر غور ہوگا،برآمد سے چینی کی قیمتوں میں اضافہ نہیں ہونا چاہیے،قیمتوں میں اضافہ نہیں ہوتا استحکام رہا تو اجازت دی جا سکتی ہے۔، وزیراعظم شہبازشریف نے چینی کی برآمد کا جائزہ لینے کے احکامات جاری کردیے۔ نجی ٹی وی کے مطابق ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم نے کابینہ کے حالیہ اجلاس میں وزارت نیشنل فوڈسیکیورٹی کو ہدایت کی۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ مقامی ضروریات پوری ہونے کی شرط پر چینی ایکسپورٹ پر غور کیا جائے، برآمد پرغورکرتیوقت چینی کی قیمت میں اضافہ نہ ہونے کویقینی بنانا ہوگا۔ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ ماہ شوگر ایڈوائزری بورڈ کے 2 اجلاسوں میں چینی برآمد کا فیصلہ نہیں ہوسکا تھا، برآمدکو مقامی مارکیٹ میں چینی کی قیمتوں میں استحکام سے جوڑنیکی تجویز دی گئی تھی۔انہوں نے بتایا کہ شوگر ملز مالکان نے 15 لاکھ میٹرک ٹن چینی کی برآمد کا مطالبہ کر رکھا ہے، شوگر ملز مالکان نے پہلے مرحلے میں 5 لاکھ ٹن چینی کی برآمد کیلیے اجازت مانگی ہے۔وزیراعظم محمد شہبازشریف نے صادق خان کو لندن کا مئیر منتخب ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک محنتی برطانوی پاکستانی کے قابل فخر فرزند نے اپنے والدین کا ہی نہیں ہر پاکستانی کا سر فخر سے بلند کیا ہے۔ اپنے تہنیتی پیغام میں وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ لندن کا مئیر بننے کی ہیٹرک مکمل کرنے پر صادق خان کو دلی مبارک پیش کرتا ہوں،تیسری بار لندن کا مئیر منتخب ہونا یقینا صادق خان کی قابلیت اور عوامی خدمت کا منہ بولتا ثبوت ہے وزیراعظم محمد شہبازشریف نے سعودی عرب کے معروف شاعر اور ادیب شہزادہ بدربن عبد المحسن کے انتقال پر رنج وغم اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔وزیر اعظم نے اتوار کو ایکس پر اپنی ایک پوسٹ میں کہا کہ شہزادہ بدربن عبد المحسن کی وفات یقینا سعودی عرب کیلئے ہی نہیں بلکہ پورے جزیرہ عرب میں ان کے مداحوں کے لئے بڑے غم کی خبر ہے۔ شہزادہ بدر کا لکھا سعودی عرب کے قومی دن پر سب سے زیادہ سنا جانے نغمہ ان کی یاد ہمیشہ دلاتا رہے گا۔

گندم رپورٹ

  لاہور(این این آئی)پنجاب حکومت کی جانب سے گندم کی امپورٹ کی نشاندہی تاخیر سے کی گئی، سیکرٹری خوراک پنجاب نے 31 مارچ کو آخری جہاز آنے سے 6 روز پہلے گندم کی امپورٹ پر اعتراض اٹھایا تھا۔ذرائع کے مطابق سیکرٹری خوراک پنجاب کی جانب سے 25 مارچ 2024 کو لکھا گیا خط سامنے آگیا۔خط کے متن کے مطابق اب تک ساڑھے 34 لاکھ ٹن گندم امپورٹ کی جاچکی ہے جبکہ گندم کی پیدوار 2 کروڑ 13 سے بڑھ کر 2 کروڑ 42 لاکھ ٹن متوقع ہے۔خط کے متن کے مطابق امپورٹ جاری رہی تو مارکیٹ میں گندم سرپلس ہوگی اور کسان بھی متاثر ہوگا۔خط میں مزید کہا گیا کہ پنجاب حکومت نے گزشتہ برس 40 لاکھ ٹن گندم کی خریداری کی، امپورٹڈ گندم آنے کی وجہ سے گندم کی ریلیز محض 18 لاکھ ٹن ہوسکی، پنجاب کے پاس 22 لاکھ ٹن گندم کا ذخیرہ موجود ہے۔

پنجاب اعتراض

مزید :

صفحہ اول -