چیف الیکشن کمیشن کی تقرری کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل طلب 

چیف الیکشن کمیشن کی تقرری کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل طلب 
چیف الیکشن کمیشن کی تقرری کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل طلب 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور ہائیکورٹ نے چیف الیکشن کمیشن کی تقرری کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل طلب کرلئے۔

نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں چیف الیکشن کمیشن کی تقرری کیخلاف دائر درخواست پراعتراض کیساتھ سماعت ہوئی، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ایڈووکیٹ طالب میکن کی درخواست پر سماعت کی،عدالت نے استفسار کیا کہ کیا آپ کیس کی تیاری کر کے آئے ہیں؟طالب حسین ایڈووکیٹ نے کہاکہ جی ! میں تیاری کرکے آیا ہوں،عدالت نے کہاکہ آپ سپریم کورٹ فیصلے دکھائیں کہ الیکشن کمیشن کیخلاف درخواست دائر ہو سکتی ہے،عدالت نے کہاکہ رجسٹرار آفس کا اعتراض ہے کہ لاہور ہائیکورٹ میں یہ درخواست دائر نہیں ہو سکتی،رجسٹرار آفس کا کہنا ہے کہ آپ کو یہ درخواست دائر کرنے کیلئے اسلام آباد جاناچاہئیے،آپ لوگ اتنے اہم کیس دائر کرتے ہیں، تیاری نہیں کرتے،ایسے کیسز کی وجہ سے عام لوگوں کا نقصان ہوتا ہے،عدالت نے کہاکہ آپ نے سپریم کورٹ کا جو فیصلہ پیش کیا اس میں وہ بات نہیں لکھی جو آپ کہہ رہے ہیں،آپ کی یا میری خواہش کی بات نہیں ہے، ہم نے قانون کے مطابق فیصلہ کرنا ہے،آپ کی درخواست کے مطابق الیکشن کمشنر صرف سپریم کورٹ یا ہائیکورٹ کا جج لگ سکتا ہے،آئین کے مطابق تو جج یا کوئی ٹیکنوکریٹ بھی الیکشن کمشنر لگ سکتا ہے،عدالت نے وکلا کو مزید تیاری کی مہلت دیتے ہوئے درخواست کے قابل سماعت پر دلائل طلب کرلئے اور کیس کی سماعت 15مئی تک ملتوی کردی۔