لوڈشیڈنگ پرقابوپانے کے لئے منصوبہ بندی کافقدان ہے: انجینئر میاں سلطان برق

لوڈشیڈنگ پرقابوپانے کے لئے منصوبہ بندی کافقدان ہے: انجینئر میاں سلطان برق

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(کامرس رپورٹر)انجینئر میاں سلطان برق نے کہاہے کہ داسو ڈیم شروع کرنے پر پنجاب حکومت کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں لیکن اس وقت لوڈشیڈنگ پرقابوپانے کے لئے منصوبہ بندی کافقدان ہے جس کے باعث تاحال اس بات کا تعین نہیں کیاجاسکاکہ زراعت،انڈسٹری،رورل ایریایااربن ایریامیں سے کس سیکٹرکی لوڈشیڈنگ کوپہلے ختم کیاجائے ۔لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انھوں نے مزیدد کہا حکومت کو ملکی سطح پر انڈسٹری کو فروغ دیناچاہیے اس سے ایک تو ملکی انڈسٹری مضبوط ہوگی دوسراروزگارکے مواقع بڑھے گے جس سے مہنگائی میں بھی کمی واقع ہوگی اس کی نسبت چائینہ،کوریا اوردیگر ممالک کی انڈسٹیریزسے منگوائی گئی اشیاء نہ صرف مہنگی ہوں گی اس سے ملکی انڈسٹری مثاثر ہونے سے مہنگائی، بیروزگاری اور کرپشن میں بھی اضافہ ہوگا۔ انھوں نے مزیدکہاکہ واپڈاسے ریٹائرڈافرادکو بجلی مفت فراہم کی جاتی ہیں اور ان کی اولاد گرمیوں میں سوئچ آن کرتے ہیں۔
اور سردیوں میں سوئچ آف کرتے ہیں جس کاتمام بوجھ بھی عوام الناس کو برداشت کرناپڑتاہے۔انھوں نے کہاکہ حکومت کو پرائیویٹ کمپنیوں اور انڈسٹری کی مدد کرنی چاہیے جو ملک میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے کام کررہی ہیں،اس کے ساتھ واپڈا اور این ڈی ٹی سی کو بھی میدان عمل میں آنا چاہیے،انہوں نے کہا آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کو بھی پاکستان میں توانائی بحران کے خاتمے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے،حکومت اور واپڈا کے اعلیٰ افسران محکمہ میں موجود کرپٹ اور کالی بھیٹروں کے خلاف سخت ایکشن لیں جو محکمہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان بنے ہوئے ہیں جن کی وجہ سے ایک منافع بخش محکمہ خسارے میں جا رہا ہے۔

مزید :

کامرس -