سانحہ سندر کے ذمہ داروں کو کٹہرے میں لایا جائے ، صنعتکار تاجر

سانحہ سندر کے ذمہ داروں کو کٹہرے میں لایا جائے ، صنعتکار تاجر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور(اسد اقبال )صنعتکار اور تاجر رہنماؤ ں نے گزشتہ روز سندر انڈسٹر یل اسٹیٹ میں فیکٹری میں جاں بحق اور زخمی ہو نے والے مزدورں کے جانوں کے ضیاع پر دکھ کا اظہار کر تے ہوئے حکو مت سے مطالبہ کیا ہے کہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں چار منزلہ فیکٹری کے منہدم ہونے کی شفاف تحقیقات کر کے غفلت برتنے والوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے جبکہ انڈسٹریل قانو ن کے ضابطہ اخلاق پورے نہ کر نے والے فیکٹری مالکان کے خلاف اقدامات اٹھائے جائیں ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو کر تے ہوئے پنجاب سر مایہ کاری بورڈ کے چیئر مین عبدالباسط ،پیاف کے چیئر مین عرفان اقبال شیخ ، لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایگزیکٹو ممبر عدنان بٹ ،آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر خالد پرویز ،انجمن تاجران پنجاب کے صدر چوہدری محبو ب علی سر کی اور فیڈریشن آف چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پنجاب کے وائس چیئر مین حمید اختر چڈھا نے اظہار خیال کر تے ہوئے کہاکہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں ہونے والی ہلاکتوں پر بہت دکھ ہوا ہے ۔مرحومین اور زخمی مزدوروں کے لواحقین کے غم میں برابر کے شر یک ہیں جن کے کمانے والے اب نہیں رہے ۔انھوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ سانحہ سندر اسٹیٹ میں جاں بحق اور زخمی ہو نے والوں کے بچوں کی کفالت کے لیے اقدامات ہو نے چائیے۔انھوں نے کہا کہ ماضی گواہ ہے کہ ہرسانحہ کے بعد حکومتی سطح پر تحقیقاتی کمیٹی بنا دی جاتی ہے اور تفصیلات سرد خانوں میں ڈال دی جاتی ہے جبکہ اصل حقائق کو نہ تو سامنے لایا جاتا ہے اور نہ ہی ملزمان کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومتی سطح پر سندر اسٹیٹ سمیت دیگر صنعتی یونٹس کی عمارتوں کا بھی مکمل جائزہ لیا جائے اور کمزور درودیوار اور بنیادوں کی حامل عمارتوں فیکٹریوں اور کارخانوں کوفوری طور پر خالی کروا کے نقشے کے مطابق اور تعمیراتی سٹینڈرز کے مطابق میٹریل سے تیار کروائی جائیں ،اور تعمیراتی سٹینڈرز کا خیال نہ رکھنے والی فیکٹریوں اور کارخانوں کو کے مالکان کو بھاری جرمانے کئے جائیں اور ان کی صنعتوں کو بھی سیل کر دیا جائے ، جو اپنے فائدے کی خاطر ناقص میٹریل سے بڑی بڑی فیکٹریاں اور کارخانے تعمیر کر کے غریبوں کی زندگیوں کو داؤ پر لگا دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انڈسٹریل قانون کے مطابق ضابطہ اخلاق پر پورا نہ اترنے والوں سے کسی بھی قسم کی رعایت نہ برتی جائے جبکہ فیکٹری ایریا کے اندر یا قریب ہسپتالوں کا قیام بھی یقینی بنایا جائے تاکہ کسی بھی قسم کی ہنگامی صورتحال میں جانی و مالی نقصان ہونے کے امکانات کو کم کیا جا سکے۔ رہنماؤں کا مذید کہنا تھا کہ ملک بھر کے صنعتکار اور تاجر سانحہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں جاں بحق اور زخمی افراد کے اہل خانہ کے دکھ میں برابر کے شر یک ہیں۔