مودی کی سیکورٹی پرمامو ر خصوصی کمانڈوز نے سونہ وار کرکٹ اسٹیڈیم کا چارج سنبھال لیا

مودی کی سیکورٹی پرمامو ر خصوصی کمانڈوز نے سونہ وار کرکٹ اسٹیڈیم کا چارج ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


سری نگر(کے پی آئی)بھارتی وزیر اعظم مودی کی سیکورٹی پرمامو ر خصوصی کمانڈوز نے سری نگر سونہ وار میں کرکٹ اسٹیڈیم کا چارج سنبھال لیا ۔اس دوران ریاستی پولیس کے سربراہ کے راجندر کمار نے بدھوار کو کرکٹ اسٹیڈیم کا دورہ کرکے یہاں سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لیا اور کہا کہ 7نومبر کو سرینگر جموں شاہرہ بھی ٹریفک کی آمدرفت کیلئے کھلی رہے گی ۔ وزیر اعظم ہند نریندر مودی کے دورہ کشمیر سے2روز قبل ہی انکی حفاطت پر تعینات خصوصی کمانڈوز کے دستے نے سونہ وار میں کرکٹ اسٹیڈیم کا چارج با ضابطہ طور پر سنبھال لیا ۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سے قبل سرینگر میں سیکورٹی کی ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس کے دوران آئی جی کشمیر نے سپیشل پروٹیکشن گروپ کے افسران کو نریندر مودی کے دورہ کشمیر اور7نومبر کو سرینگر میں منعقد ہونے والی ریلی کے بارے میں کئے گئے حفاظتی اقدامات کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا۔بدھ کوریاستی پولیس کے سربراہ کے راجندرا کمار نے بھی سونہ وار میں قائم اسٹیڈیم کا دورہ کیا اور سیکورٹی کا جائزہ لیا ۔بعدازاں انہوں نے پولیس کنٹرول روم جموں میں ایک اعلی سطحی میٹنگ میں وزیر اعظم کے دورہ ریاست کے پیش نظر اور 9نومبر 2015کو سرمائی راجدھانی میں دربارمو دفاتر کھلنے کے سلسلے میں کئے جارہے حفاظتی انتظامات کا جائزہ لیا گیا ۔دوران میٹنگ وزیر اعظم کے ریاست کے دورے کیلئے تمام حفاظتی انتظامات پر مفصل غور و خو ض ہوا ۔میٹنگ میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کے راجندرا نے وی وی آئی پی حفاظت کیلئے تعینات مختلف ایجنسیوں اور فورسز کے مابین قریبی تال میل پر زور دیا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ جہاں اسٹیڈیم میں3حصاروں والی سیکورٹی نافذ کی جائے گی وہی2کلو میٹر کے دائرے کے تحت آنے والے علاقوں میں سخت ترین نظر گزر اور پوچھ تاچھ کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے۔لالچوک کے علاوہ شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر بھی خصوصی نا کے بٹھائے گئے ہیں اور گاڑیوں و مشتبہ راہ گیروں سے تلاشیاں لی جارہی ہے۔اس دوران پولیس سربراہ کے راجندرا نے بتایا کہ وزیراعظم مودی کے دورہ4 ریاست کے پیش نظر 7 نومبر کو سرینگر جموں شاہراہ بند رکھنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ شاہراہ بند رکھنے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے بلکہ شاہراہ حسب معمول کھلی رہے گی اور ٹریفک چلتا رہے گا

مزید :

عالمی منظر -