جرائم کاخاتمہ ہی نہیں تھانوں کی حدود کا تعین بھی محکمہ پولیس کیلئے اہم مسئلہ بن گیا

جرائم کاخاتمہ ہی نہیں تھانوں کی حدود کا تعین بھی محکمہ پولیس کیلئے اہم مسئلہ ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لا ہور (شعیب بھٹی ) سنگین مقدمات میں تھانوں کی حدود کا تعین پولیس کیلئے درد سربن گیا۔ایک تھانے کی حد ختم ہونے اور دوسرے کی شروع ہونے کے پوائنٹ پر اکثر پیش آنے والے حادثات متعلقہ تھانو ں کے درمیان وجہ تنازع بن جاتے ہیں ۔جس میں تھانوں کی پولیس یہ تعین کرنے میں ناکام رہتی ہے کہ وقوع کس کی حدود میں ہوا۔جس میں بعض اوقات پولیس جان بوجھ کر تنازع بنانے کی بجائے کسی ایک تھانے کو کیس ریفر کر دیتی ہے ۔بصورت دیگر متعلقہ ایس پی کی موجودگی میں متنازعہ علاقے کی پیمائش کی جاتی ہے کہ وہ علاقہ کس تھانے کی حدود میں آتا ہے ۔پیمائش کے دوران ایس پی کاکردار ایک جج کا ہوتا ہے کہ وہ پیمائش کے بعد متنازعہ علاقہ کو کس کی حدود میں ہونیکا اعلان کرتا ہے۔ تھا نو ں کی حدود ہمیشہ ہی پو لیس میں وجہ تنازع بنی ر ہتی ہے اور اکثر پو لیس افسرا ن بھی سنگین نو عیت کے مقد مہ کو در ج کر نے سے گر یز کرتے ہیں کیونکہ افسرا ن ان مقد ما ت میں کا ر گردگی بھی د یکھتے ہیں ۔ تھا نو ں کے در میا ن حدود کاتنا زع جب ہوجا ئے تو دونو ں تھا نو ں کے افسرا ن بعض اوقات پیما ئش بھی شروع کردیتے ہیں اور یہ کوشش کی جا تی ہے کسی بھی سنگین مقد مے کے اندار ج سے بچنے کے لئے دوسرے کی حدود بنا دی جا تی ہے ۔ صو با ئی دا ر لحکومت میں ایک تھا نے کی حدود میں کئی تھانوں کی حدود بھی شامل ہو تی ہیں ۔ مثال کے طو ر پر ایک تھا نے کی ایک سڑ ک میں دو تھا نے شامل ہو تے ہیں اور اکثر اس با رے میں اعلی ٰ افسرا ن بھی شامل ہو جا تے ہیں اور وہ حدود کا تعین کر نے کے با رے میں ہدا یت د یتے ہیں ۔

مزید :

علاقائی -