مانگا منڈی ،اوباش کی13 سالہ معذور لڑکی سے بد اخلاقی ،پولیس ملزم کیساتھ مل گئی

مانگا منڈی ،اوباش کی13 سالہ معذور لڑکی سے بد اخلاقی ،پولیس ملزم کیساتھ مل گئی
 مانگا منڈی ،اوباش کی13 سالہ معذور لڑکی سے بد اخلاقی ،پولیس ملزم کیساتھ مل گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 مانگا منڈی (نمائندہ خصوصی)مانگا منڈی میں 13سالہ لڑکی کے ساتھ 40سالہ شخص نے دن دیہاڑے بداخلاقی کر ڈالی۔تفصیلات کے مطابق شامکی بھٹیاں کے رہائشی لیاقت علی بھٹی کی بچی رابعہ بتول گھر میں اکیلی تھی بچی کے والد لیاقت علی اور اس کے بھائی جابر حسین نے پریس کلب مانگا منڈی کے سرپرست اعلیٰ ملک ممتاز حسین سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مانگا منڈی کا رہائشی محمد الیاس ولد محمد اکرم مستری شامکی بھٹیاں میں آرے کا کام کرتا تھا بچی کے بھائی جابر نے بتایا کہ میں اس کے آرے میں کام کرتا ہوں میری بہن رابعہ بتول گھر میں اکیلی تھی مستری محمد الیاس گھر کی دیوار پھلانگ کر اندر داخل ہوکر میری معذور بہن کے ساتھ بداخلاقی کرکے فرار ہو گیا۔ کمرے میں بچی خون میں لت پت پڑی تھی، بچی کے تمام کپڑے خون سے بھرے پڑے تھے ،ہم نے فوراًتھانہ مانگا منڈی اطلاعدی تو اے ایس آئی انور شہزاد بھاری نفری لیکر ہمارے پہنچ گئے۔ ہم نے مستری الیاس کو پہلے ہی آرے سے پکڑ لیا تھا۔ انور شہزاد رابعہ بتول اور ملزم الیاس کو تھانے لے آئے ۔اس کے بعد بچی کو فوری طور پر سول ہسپتال مانگا منڈی پہنچایا گیا مگر وہاں پر لیڈی ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے طبی امداد نہ مل سکی ،موقع پر ڈاکٹر محمد فاروق نے بتایا کہ اس وقت لیڈی ڈاکٹر نہ ہے اور نہ ہی ہمارے پاس ایمبولینس ہے آپ بچی کو جناح ہسپتال لاہور لے جائیں بچی کی جان خطرے میں ہے۔ پریس رپورٹر ملک ممتاز حسین نے تھانے میں جاکر ملزم کے بارے میں پوچھا تو نائب محرر منشی شبیر احمد نے کہا کہ ملزم ہمارے پاس نہ ہے مگر ملزم الیاس حوالات میں بند تھا ۔ملک ممتاز حسین کے اصرارکرنے پر نائب محرر نے کہا کہ میں آپ کو نہیں ملا سکتا آپ جو کرنا چاہتے ہیں کر لیں۔ ملزم کی تصویر نہ دینے پر شامکی بھٹیاں کے افراد اور لواحقین نے پولیس کے خلاف زبردست احتجاج کیا۔ بچی کے والد لیاقت علی ،بھائی جابر علی نے سی سی پی او لاہور اور وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے انصاف کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -