لاہور ایئرپورٹ قومی اور نجی ایئرلائنزکے انجینئرنگ شعبے کی غفلت ،اکثر ان فٹ طیارے کلیئر قرار

لاہور ایئرپورٹ قومی اور نجی ایئرلائنزکے انجینئرنگ شعبے کی غفلت ،اکثر ان فٹ ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور( ارشد محمود گھمن) علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئر پورٹ لاہور پی آئی اے اور نجی شاہین ائیرلائن ،ایئر بلو کے انجینئرنگ سیکشن کے عملہ کی غفلت لاپرواہی کی وجہ سے اکثر طیاروں کی ٹیکنیکل خرابی کو نظر انداز کر کے کلیئر قرار دینے کا انکشاف ہوا ہے، جبکہ سول ایوی ایشن ادارہ کا ایئر وردنس سیکشن بھی غفلت کا شکار طیاروں کی صحیح چیکنگ کئے بغیر کلیئرنس کرکے فلائٹ کے معمول کی تاخیر کئے جانے سے بچایا جاتا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پی آئی اے کے تقریباََ 36 شاہین ایئر لائن 17 اور ایئربلو کے15 طیارے پرواز کرتے ہیں جس میں روزانہ ہزاروں افراد ڈومیسٹک اور بیرون ممالک میں جانے کے لئے پرواز کرتے ہیں۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ان ایئر لائن کے ٹیکنیکل انجینئرنگ سیکشن کا عملہ ہمیشہ اپنی غفلت اور لاپرواہی کے مرتکب پایا جاتا ہے۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ سول ایوی ایشن ادارہ نے ایئروردنس سیکشن قائم کر رکھا ہے جو بھی جہازوں کی چیکنگ کرتا ہے مگر تمام سیکشن عملہ ہمیشہ غفلت اور لاپرواہی کے مرتکب پائے جاتے ہیں۔ فلائٹ کے معمول کو درست رکھنے کے لئے طیاروں میں چھوٹی موٹی غلطی کو نظرانداز کر دیاجاتاہے جبکہ چندروز قبل شاہین ایئر لائن کی فلائٹ نمبر ایل این 132 جو کراچی سے لاہور بی چھوٹی موٹی غلطی توجہ نہ دینے کی وجہ سے ایک بڑے حادثہ کاشکار ہونے سے بال بال بچ گیا تھا اور سینکڑوں مسافروں کو نئی زندگی کا موقع ملا۔ ذرائع نے بتایا کہ ایسا حادثہ ہونے کے بعد بھی جہازوں میں ٹیکینکل خرابی کو نظرا نداز کیا جارہا ہے جس کے باعث مزید ایسا خطرناک واقعہ رونما ہونے کا خدثہ ہو سکتا ہے۔