ہزاروں کمرشلز یونٹس بغیر نقشے کے تعمیر ہونیکا انکشاف

ہزاروں کمرشلز یونٹس بغیر نقشے کے تعمیر ہونیکا انکشاف

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(اقبال بھٹی سے) صوبائی دارالحکومت میں ایل ڈی اے کی حدود میں ہزاروں چھوٹے بڑے کمرشلز یونٹس بغیر نقشے کے تعمیر ہونے کا انکشاف۔ جس میں سینکڑوں کی تعمیر میں بڑے یونٹس تعمیر کئے گئے ہیں ۔انتظامیہ روکنے میں بری طرح ناکام تفصیلات کے مطابق لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی حدود میں ہزاروں کی تعداد میں چھوٹے بڑے کمرشلز یونٹس جن کا نقشہ نہ تو اتھارٹی سے منظور کروایا گیا ہے اور نہ ہی تعمیر کرتے وقت بائی لاز کا خیال رکھا گیا ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ غیر قانونی کمرشلز یونٹس پورے شہر میں پھیلے ہوئے ہیں جن میں خاص کر یتیم خانہ سے ٹھوکر نیاز بیگ تک ملتان روڈ اور موٹر وے بند کے اندرونی حصے میں بنائے گئے ہیں اس کے علاوہ فیروز پور روڈ پر کئی جگہوں پر غیر قانونی یونٹس تعمیر ہیں اور شاہدرہ کے علاقے میں بھی غیر قانونی کمرشلز یونٹس تعمیر ہیں اس کے علاوہ شادباغ میں مصری شاہ، وسن پورہ، جی ٹی روڈ شالامار چوک سے لے کر دروغہ والا تک ان تمام جگہوں پر ہزاروں کی تعداد میں غیر قانونی کمرشلز یونٹس قائم کئے گئے ہیں ان کمرشلز یونٹس میں جوتے بنانے کے کارخانے پلاسٹک بنانے کے کارخانے بوتل بنانے کے کارخانے پلاسٹک کے تھیلے بنانے کے علاوہ الیکٹرک وائر کے کارخانے بھی موجود ہیں اس کے علاوہ جی ٹی روڈ پر رنگ والا کارخانہ ، پاکستان منٹ چوک ،ناخن والا چوک، لکھو ڈیئر، نیو کرول، سلطان محمود روڈ، محمود بوٹی کے علاقے پلاسٹک کے لفافے بنانے کی مارکیٹ بن چکے ہیں ۔ان تمام کمرشل یونٹس کے نہ تو اتھارٹی سے نقشے منظور کروائے گئے ہیں اور نہ ہی تعمیر کرتے وقت بائی لاز کا خیال رکھا گیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -