حکومت اے پی سی میں پاک چین راہداری منصوبے کے فیصلوں سے منحرف ہو گئی ، اسفند یارولی

حکومت اے پی سی میں پاک چین راہداری منصوبے کے فیصلوں سے منحرف ہو گئی ، اسفند ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 چارسدہ (بیورورپورٹ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ حکومت اے پی سی میں پاک چین راہداری منصوبے کے حوالے سے کئے گئے فیصلوں سے منخرف ہو چکی ہے ۔ آئندہ کیلئے کسی بھی اے پی سی میں شرکت نہیں کرینگے ۔ پاکستان کے مغربی اور مشرقی سرحد وں پر حالات خراب ہے ۔ خیبر پختونخواہ میں تحریک انصاف کو فرشتوں نے ووٹ دئیے ۔ کالا باغ ڈیم پختونوں کے بقاء کا مسئلہ ہے ۔ عمران خان جہاں سے جیتے ہیں وہاں واہ واہ کرتے ہیں مگر جہاں شکست کھاتے ہیں وہاں آسمان سر پر اُٹھاتے ہے ۔ وہ چارسدہ کے علاقہ نستہ میں پارٹی کے ورکرز کنونشن سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس موقع پر پارٹی کے دیگر صوبائی اور ضلعی رہنماء بھی موجود تھے۔ اسفند یار ولی خان نے کہا کہ خیبر پختون خوا میں تحریک انصاف کو ایک سازش کے تحت حکومت میں لایا گیا ہے ۔ عام انتخابات میں تحریک انصاف کو فرشتوں نے ووٹ دئیے ۔ آپریشن ضرب عضب کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں مگر اپریشن کسی مسئلے کا حل نہیں۔ انہوں نے کہاکہ افغانستان کے صدر اشرف غنی کے دورہ پاکستان میں دونوں ملکوں کے مابین ایک معاہدہ ہواکہ دونوں ملکوں کی سر زمین دہشت گردی کے لئے ایک دوسرے کے خلاف استعمال نہیں ہو گی مگر بد قسمتی سے دونوں ملکوں کے درمیان وہ معاہدہ حقیقی معنوں میں نافذ نہ ہو سکا ۔ دونوں ملکوں کے ذمہ دار حکام کی ذمہ داری بنتی ہے کہ اس حوالے سے دونوں اقوام کو حقائق سے آگاہ کریں کیونکہ دونوں ملکوں کے مابین یہ بھی طے ہو اتھا کہ افغانستان کا دشمن پاکستان کا دشمن اور پاکستان کا دشمن افغانستان کادشمن ہو گا۔انہوں نے کالا باغ ڈیم کی تعمیر کی شدید مخالفت کی اور کہاکہ یہ پختونوں کے بقا کا مسئلہ ہے کسی صورت اسے تعمیر نہیں ہونے دینگے ۔ اسفند یار ولی خان نے پاک چین کوریڈور کے حوالے سے کہا کہ بے شک یہ پاکستان کی ترقی اور حوشحالی کا منصوبہ ہے مگر اے پی سی میں حکومت نے جو وعدے کئے تھے اس پر عمل درآمد نہیں ہو رہا۔انہوں نے کہا کہ 18ویں ترمیم میں کوئی مداخلت بر داشت نہیں کرینگے ۔ تحریک انصاف نے خیبر پختون خواہ میں پی ٹی آئی نے مخالف پارٹیوں کودبانے کیلئے ایک خود ساختہ احتساب کمیشن بنایا ہے مگر ہم کسی احتساب سے نہیں ڈرتے اور ڈٹ کر تحریک انصاف کے منفی ہتھکنڈوں کا مقابلہ کرینگے ۔ اسفند یار ولی خان نے مولانافضل الرحمان اور مولانا سمیع الحق کے حوالے سے کہا کہ دونوں رہنما محکمہ مال میں خو د کو افغانی ظاہر کرتے ہیں تاکہ ریاست پاکستان ان کے خلاف کوئی کاروائی نہ کرسکے ۔ اسفند یار ولی خان نے کہا کہ پارٹی اکابر کے خوابوں کی تعبیر کرکے خیبر پختون خواہ کو اپنا نام اور وسائل پر اختیار دیا۔