بھارت میں جنسی درندگی کا ایک اور واقعہ،چلتی بس میں لڑکی سے زیادتی

بھارت میں جنسی درندگی کا ایک اور واقعہ،چلتی بس میں لڑکی سے زیادتی
بھارت میں جنسی درندگی کا ایک اور واقعہ،چلتی بس میں لڑکی سے زیادتی

  

بنگلور(مانیٹرنگ ڈیسک )بھارت میں جنسی درندگی کا ایک اور واقعہ پیش آگیا،بنگلور میں 2افرادنے چلتی بس میں لڑکی کوزیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔این ڈی ٹی وی کے مطابق ہفتے کی شب مقامی کال سنٹر میں کام کرنے والی 23سالہ لڑکی نے دفتر سے گھر جانا تھا بس سٹاپ پر پہنچی توانہیں کوئی آٹو رکشہ نہ ملا۔اتنے میں ایک منی بس آ گئی جس میں موجود ڈرائیور اور کنڈیکٹر نے اسے منزل پر پہنچانے کی یقین دہانی کرائی وہ اپنی کولیگ کے روکنے کے باوجود بس میں سوار ہوگئیں ۔راستے میں کنڈیکٹر نے چلتی بس میں چاقو کی نوک پر اس سے زیادتی کی جبکہ بس جب ویران جگہ پہنچی توڈرائیور نے گاڑی روک کر عصمت پامال کی ۔لڑکی ان کی منتیں کرتی رہیں مگر انہوں نے ایک نہ سنی اور زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد ایک ٹمپل کے سامنے پھینک کر چلے گئے ۔جس کے بعد لڑکی نے اپنے گھر والوں کوفون کیا جنہوں نے اسے تشویشناک حالت میں ہسپتال پہنچایا ۔

بھارتی اخبارٹائمز آف انڈیا کے مطابق پولیس نے بتایاکہ ڈرائیور نے کنڈکٹر کو گاڑی چلانے کی ہدایت کی اور خود اس نے چلتی بس میں مبینہ طورپر لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنادیا۔پولیس نے گاڑی کے ڈرائیور شموگہ کے چھبیس سالہ روی اور تئیس سالہ کنڈکٹر منجوناتھ کو حراست میں لے لیا جبکہ بس بھی تحویل میں لے لی گئی ۔ رپورٹ کے مطابق جنسی درندگی کے بعد ڈرائیور نے لڑکی کو اتاردیا اور اسے فوری طورپر قریبی سرکاری ہسپتال میں داخل کرادیاگیاجبکہ سلیبی پولیس سٹیشن میں مقدمہ درج کرلیاگیا۔

مزید :

بین الاقوامی -