بھارتی جنگی جنون، جاپان سے 10 ہزار کروڑ روپے مالیت کے جدید طیارے خریدنے کی تیاریاں

بھارتی جنگی جنون، جاپان سے 10 ہزار کروڑ روپے مالیت کے جدید طیارے خریدنے کی ...
بھارتی جنگی جنون، جاپان سے 10 ہزار کروڑ روپے مالیت کے جدید طیارے خریدنے کی تیاریاں

  



نئی دلی(ویب ڈیسک)بھارت کا جنگی جنون ہے کہ بڑھتا ہی جا رہا ہے ایک طرف تو نریندر مودی کی حکومت آنے کے بعد سے جہاں مقبوضہ کشمیر میں حالات خراب ہوئے تو وہیں پاکستان کے ساتھ لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر بھی کشیدگی بڑھی جب کہ دوسری جانب بھارت مختلف ممالک سے اسلحہ خرید کر خطے کی سیکیورٹی کے لئے بھی خطرہ بنتا جارہا ہے اور اب بھارت نے جاپان سے 10 ہزار کروڑ روپے مالیت کے جدید ترین طیارے خریدنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نومبر کے دوسرے ہفتے میں جاپان کا دورہ کریں گے جس میں دونوں ممالک کے درمیان سول نیوکلیئر کوآپریشن کے معاہدے پر دستخط کئے جائیں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت اس دورے میں جاپان سے جدید نوعیت کے ایک درجن یو ایس ٹو آئی طیارے خریدنے کا معاہدہ بھی کرے گا۔

بھارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ دو روز بعد وزیر دفاع منوہر پاریکر کے زیر صدارت ڈیفنس ایکویزیشنز کونسل (ڈی اے سی) کا اجلاس ہو گا جس میں جاپان سے یو ایس ٹو آئی پراجیکٹ کے تحت 12 طیارے خریدنے کے لئے مفاہمتی یادداشت کے معاملات طے کئے جائیں گے۔ پانی کی سطح اور خشکی پر اترنے اور پرواز کرنے کے قابل، ایسے 6 طیارے بھارتی بحریہ اور 6 کوسٹ گارڈز کو فراہم کئے جائیں گے۔

ایسا طیارہ جو پانی اور خشکی دونوں سے پرواز کرنے اور اترنے کی صلاحیت رکھتا ہو اسے جل تھلیہ (ایمفی بیئس) طیارہ بھی کہا جاتا ہے۔ عام طور پر یو ایس ٹو آئی طیاروں کو سرچ اور ریسکیو آپریشن کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ طیارے کسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں 30 مسلح سپاہیوں کو فوری طور پر ریڈ زون میں اتارنے کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی