رانا ثناء اللہ کیخلاف اندراج مقدمہ کیس،پولیس کا جواب غیر تسلی بخش قرار

رانا ثناء اللہ کیخلاف اندراج مقدمہ کیس،پولیس کا جواب غیر تسلی بخش قرار

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت میں سابق وزیر اعظم میاں محمدنواز شریف کے استقبال کو مبینہ طور پرحج کے برابر ثواب قراردینے کے متنازع بیان دینے پرسابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کے خلاف اندراج مقدمہ درخواست کی سماعت ہوئی، ایڈیشنل سیشن جج فیاض احمد بٹر نے درخواست پر سماعت کی، گزشتہ روز پولیس کی جانب سے تسلی بخش جواب موصول نہ ہونے پر فاضل جج نے ایس ایچ او سول لائنز کو 17 نومبر کوذاتی طور پر طلب کر لیاہے۔

سیشن کورٹ میں متنازع بیان دینے پرسابق صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کے خلاف اندراج مقدمہ کیس کی سماعت ہوئی، درخواست گزار ایوب اعوان نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی وساطت سے رانا ثنا ء اللہ کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کر رکھی ہے ،درخواست گزار کا موقف ہے رانا ثناء اللہ نے نوازشریف کے استقبال کو حج کے برابر ثواب قرار دیا اور اسلامی شعائر کا مذاق اڑایا، رانا ثناء اللہ کے اس بیان سے عوام الناس کے مذہبی جذبات مجروع ہوئے ہیں، پولیس رانا ثنا ء اللہ کے خلاف مقدمہ درج نہیں کررہی، عدالت سے استدعا ہے کہ مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید : علاقائی