غندہ راج ، پنجاب ، اسلام آباد اور خیبر پختونخوا میں پنپ رہا ہے : پیپلز پارٹی سندھ

غندہ راج ، پنجاب ، اسلام آباد اور خیبر پختونخوا میں پنپ رہا ہے : پیپلز پارٹی ...

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پیپلزپارٹی سندھ کے رہنماں نے وفاقی وزیر فواد چوہدری کوتھالی کا بیگن قراردیتے ہوئے سندھ حکومت سے متعلق ریمارکس کومسترد کردیا ہے اور کہاہے کہ غنڈہ راج پنجاب، اسلام آباد اور خیبرپختونخوا میں پنپ رہا ہے،وفاقی حکومت بیساکھیوں کے سہارے کھڑی ہے،ہیپلزپارٹی نے چوڑیاں نہیں پہن رکھی ہیں،وفاقی حکومت نے بیان کی وضاحت نہ کی تو فساد چوہدری کا بیان وفاقی حکومت کی پالیسی تصورہوگی ۔ ان خیالات کا اظہاروزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی وقار مہدی پیپلزپارٹی سندھ کے سیکریٹری اطلاعات سینیٹرعاجزدھامرا،راشد ربانی نے پیپلزمیڈیاسیل میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔صوبائی سیکریٹری جنرل وقارمہدی کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے سندھ حکومت کو دھمکی دی اوراسے چند دن کی مہمان حکومت قراردیا وفاقی وزیرکوبتانا چاہتے ہیں کہ پیپلزپارٹی نے بھیک سے حکومت نے نہیں بنائی بلکہ عوامی مینڈیٹ سے حکومت قائم کی ہے وہ وفاقی حکومت کا سوچیں جوبیساکھیوں کیسہارے کھڑی ہے ۔ انہوں نے فواد چوہدری کو تھالی کا بینگن قراردیا اورکہاکہ وہ مختلف سیاسی جماعتوں کی دھول چھاٹ چکے ہیں،اشاروں اور چھڑی کے سہارے حکومتیں زیادہ دیر تک نہیں چلتیں۔وقارمہدی نے کہاکہ عوام پر مہنگائی کا بم گرایا گیا انہیں ووٹ دینے والے لوگ شرمندہ ہیں ، کبھی سندھ کا پانی بند کرنے اور گورنر راج کی دھمکی دی جاتی یے کبھی سندھ حکومت کوچند دن کا مہمان کہا جاتا ہے ،پیپلزپارٹی نے چوڑیاں نہیں پہن رکھی ہیں جواب دینا جانتے ہیں ہم جمہوریت کو ڈی ریل ہونے نہیں دینگے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کو 75 ہزار کروڑ روپے دینا سندھ پر احسان نہیں ہے سندھ صوبہ 70 فیصد ریونیو دیتاہے وفاقی حکومت کے منصوبوں میں سندھ کا نظرانداز کیا جاتا یے جس کی وجہ سے سندھ مالی بحران کا شکار ہے وفاقی وزرا نے اگر رویہ نہ بدلا تو بھرپور احتجاج کرینگے ۔ وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی راشد ربانی نے کہاکہ عمران خان کے رفقا کی غیرسیاسی رویے کی مذمت کرتے ہیں ،فواد چودھری اور عمران خان کا رویہ ملک اور عوام کہ لیے نقصاندہ ہے۔سینیٹرعاجزدھامرہ نے کہاکہ فساد چوہدری کے بیان کو سندھ کے عوام اور اسمبلی پر حملہ سمجھتے ہیں فساد چوہدری اقتداری تھالی کا حواری اورسیاسی مکھی ہے پیپلزپارٹی مطالبہ کرتی ہے کہ وفاقی حکومت فساد چوہدری کے بیان کی وضاحت کرے وگرنہ ہم یہی سمجھیں گے جوکچھ سندھ حکومت کے بارے میں کہا گیا ہے یہ وفاقی حکومت کی پالیسی ہے۔ انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت حالات کا مقابلہ نہیں کرسکتی اس لئے عمران خان ایک دن پہلے چین روانہ ہوگئے تحریک انصاف کی پالیسی منافقانہ ہے،خوش نصیب وفاق کو بتانا چاہتے ہیں کہ آپ کو وہ فسادی اپوزیشن نہیں ملی، جو دھرنے والوں سے مل کر سیاست کرتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کو اپنا جائز حق نہیں مل رہا این ایف سی ایوارڈ پر عمل کیا جائے، اگر اٹھارہویں ترمیم کو رول بیک کیا گیا تو شدید مزحمت کرتے ہیں۔ پیپلزپارٹی کے رہنماں نے کہاکہ اینٹی کرپشن سندھ نے اگر کسی کہ خلاف تحقیقات شروع کی ہے تو اس پر کیوں برہم ہو رہے ہیں ،خیبرپختونخواہ میں بے نامی اکانٹس سے تیس ارب روپے سے زائد کی ٹرانزیکشن کیسے ہوئی ہے ۔ عاجزدھامرہ نے کہاکہ فواد چودھری بتائیں کہ وہ کس منہ سے پیپلزپارٹی میں آئے تھے،فوادچودھری اب کس پارٹی میں جائینگے وہ عوام کوپہلے بتادیں بتائیں ایک سوال کے جواب میں وقارمہدی نے کہاکہ پیپلزپارٹی سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتی وفاق سے کوئی این آر او نہیں ہونے دیں گے۔

مزید : کراچی صفحہ اول