لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے سے متعلق کیس کی سماعت

لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے سے متعلق کیس کی سماعت

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی کی مقامی عدالت میں لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے سے متعلق کیس کی سماعت،عدالت نے تفتیشی افسر کو مقدمات کی فائل پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت آئندہ تاریخ تک ملتوی کردی۔پیرکوجوڈیشل مجسٹریٹ اینڈ سول جج ایسٹ کی عدالت میں ایم کیو ایم رہنماؤں کے خلاف لاؤڈ اسپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے کے متعلق مقدمات کی سماعت ہوئی۔ایم کیوایم پاکستان کے سینئررہنماڈاکٹرفاروق ستار اس موقع پرپیش ہوئے۔عدالت نے دوران سماعت ڈاکٹر فاروق ستارکو کہاکہ ڈاکٹر صاحب آپ ہمیشہ عدالت میں لیٹ آتے ہیں جس پر فاروق ستارنے کہاکہ میرا کیس 11 بجے فکس تھا اس لئے اپنے وقت پر آیا جبکہ عدالت میں تفتیشی افسر کی جانب سے فائل پیش نہ کرنے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔ تفتیشی افسرنے بتایاکہ ہم فائل تلاش کر رہے ہیں۔عدالت سے استدعا ہے کہ مہلت دی جائے۔عدالت نے کہاکہ ہم صرف آپ کو 5دن کی مہلت دے رہے ہیں،ہم بار بار تاریخ نہیں دے سکتے۔ تفتیشی افسرنے کہاکہ مجھے کم از کم14دن کا وقت دیا جائے اگر فائل نہیں ملی تو میں ایس ایس پی سے بات کرکے رپورٹ پیش کردوں گا۔عدالت نے تفتیشی افسر کا موقف سنتے ہوئے سماعت آئندہ تاریخ تک ملتوی کردی۔سماعت کے بعد میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں ڈاکٹر فاروق ستارنے کہاکہ میری جو بھی میرے ساتھ سیلفی بنائے گا اس کو دس درخت لگانے ہوں گے ہمیں زمین کی بہتری کے لئے زیادہ سے زیادہ درخت لگانے چاہئیں۔سٹی کورٹ میں موجود شہری بھی پیچھے نہ رہے اور سیلفیاں بنانا شروع کردیں۔صحافی کی جانب سے سوال کیا گیا کہ موسم کے ساتھ ساتھ سیاست دانوں کے رویے کیوں تبدیل ہوتے ہیں جس پر فاروق ستار نے کہا کہ سیاست دان موسم خود بناتے ہے کبھی گرم تو کبھی سرد اور سیاست دانوں کا رویہ بھی بالکل اسٹاک ایکسچینج کی طرح ہوتا ہے کبھی اوپر تو کبھی نیچے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر