سابق حکومت کی تمباکو پر ٹیکس سے متعلق پالیسی ناکام ہوگئی،اعظم سواتی

سابق حکومت کی تمباکو پر ٹیکس سے متعلق پالیسی ناکام ہوگئی،اعظم سواتی
سابق حکومت کی تمباکو پر ٹیکس سے متعلق پالیسی ناکام ہوگئی،اعظم سواتی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی اعظم سواتی نے کہا ہے کہ سابق حکومت کی تمباکو پر ٹیکس سے متعلق پالیسی ناکام ہوگئی، ٹیکس حکام کے بچے اوررشتہ دارسگریٹ فیکٹری میں بھرتی کیے جاتے ہیں۔سگریٹ کمپنی میں ٹیکس ممبرکی بیٹی 20 لاکھ ماہانہ تنخواہ پربھرتی کی گئی۔

سینیٹ کی خصوصی کمیٹی برائے تمباکوٹیکس کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے سینیٹرکلثوم پروین نے کہا کہ سگریٹ سازی میں 61 ارب روپے کا ٹیکس چوری ہوتا ہے۔

سینیٹردلاورخان نے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ درآمدی تمباکو پر ٹیکس کم کرکے 11 فیصد کیا گیا،تمباکو پرفی کلو ٹیکس 300 روپے کردیا گیا۔

سیکریٹری جی ایس ٹی نے کہا کہ ٹیکس ممبرکی بیٹی کومیرٹ اورقابلیت پرنوکری دی گئی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد