حکومت نے کرتار پور آنے والے یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ختم کردی

حکومت نے کرتار پور آنے والے یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ختم کردی
حکومت نے کرتار پور آنے والے یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ختم کردی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی کابینہ نے کرتار پور آنے والے یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ختم کرنے کی منظوری دے دی ۔اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہواجس میں بابا گرونانک کے جنم دن پر کرتارپور آنے والے سکھ یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ختم کرنے کی منظوری دی گئی۔وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ کرتا رپور راہداری پر صرف 9 اور 10 نومبر کو انٹری فیس نہیں لی جائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ کرتارپور آنے والے سکھ یاتریوں کے لیے پاسپورٹ کی شرط ایک سال کے لیے ختم کی گئی ہے۔فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزرا اور محکموں کو کارکردگی بہتر بنانے کے لیے 3 ماہ کی مہلت دی ہے ،اس سلسلے میں وزیراعظم کی جانب سے اگلے 3 ماہ کا روڈ میپ بھی دیا گیا ہے جس کی نگرانی خود وزیراعظم کریں گے۔

مزید : قومی