کراچی کے 80فیصد مسائل کی وجہ کرپشن ہے ،بلال غفار 

کراچی کے 80فیصد مسائل کی وجہ کرپشن ہے ،بلال غفار 

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی دنیا کے بڑے شہروں میں شمار ہوتا ہے کراچی کے 80 فیصد مسائل کرپشن اور بیڈ گورننس کی وجہ سے ہیں یہ بات ممبر سندھ اسمبلی بلال غفار نے فیصل کنٹونمنٹ بورڈ کے تعاون سے اقرا کمپلیکس گلستان جوہر میں پینے کے صاف پانی کے فلٹر پلانٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد تمام اختیارات صوبائی حکومت کو مل گئے ہیں کراچی کے مسائل اس لیے حل نہیں ہوتے کہ کراچی کو کوئی اون نہیں کرتا پوری دنیا میں میں میٹروپولیٹن کا نظام ہے ایک شہر میں ایک کارپوریشن ہوتی ہے جس کے پاس تمام اختیارات ہوتے ہیں اور تمام ادارے اس کارپوریشن کو رپورٹ کرتے ہیں کراچی کے مسائل حل کرنے کے لئے بلدیاتی اداروں کو مضبوط کرنا ہوگا تحریک انصاف نے پنجاب اور کے پی کے میں بلدیاتی نظام کو گراس روٹ تک پہنچا دیا ہے وہاں 30فیصد ڈیولپمنٹ بجٹ ڈسٹرکٹ گورنمنٹ خود اسپینٹ کرے گی کراچی میں سندھ گورنمنٹ اور مئیر کی چپخلش کی سزا عوام بھگت رہے ہیں اور فنڈز کا رونا رویا جارہا ہے جب کہ ترقیاتی کاموں کی مد میں گزشتہ سال وفاق سے 660 ارب روپے سندھ گورنمنٹ کو ملےجب کہ گزشتہ دس سالوں میں 38سو ارب روپے سندھ گورنمنٹ کو دیے جا چکے ہیں ہیں لیکن سندھ میں کہیں ترقیاتی کام نظر نہیں آتا آخر یہ پیسے کہاں گئے آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق 957 ارب روپے تو کرپشن کی نذر ہوگئے ہیں یہاں جتنے بھی مسائل ہیں یہ سب فنانشلی سبجیکٹ ہیں آپ کی صوبائی حکومت کا فرض بنتا ہے کہ وہ آپ کے مسائل حل کریں اور آپ کی بنیادی ضروریات پوری کرے کراچی کی ترقی کے لئے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا اور ہم آپ کی تعاون سے مسائل حل کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے آپ کمیونٹی سسٹم بنائیں یہ آپ کی بھی ذمہ داری ہے ہمیں اپنے اندر بھی تبدیلی لانی پڑے گی پاکستان اس وقت بڑے بین الاقوامی مسائل میں گھرا ہوا ہے ہے وزیراعظم عمران خان اپنی اعلی بصیرت سے اسے حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ہم بھی اپنے طور پر مسائل حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ہیں جس کا ہم نے وعدہ کیا تھا یہاں رشوت کلچر پھیلا ہوا ہے ہم نہ کھائیں گے اور نہ کھانے دیں گے ڈی ایم سی کے ایم سی واٹر بورڈ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اور دوسرے اداروں میں ہم اور ہماری ٹیم عبادت سمجھ کر کام کر رہی ہے کیونکہ ہمیں اللہ کے ہاں جواب دینا ہے انشائ اللہ ہم کرپشن کو ختم کرکے رہیں گے اور پاکستان کے معاشی حالات بہتر ہونگے گے اور انشائ اللہ اگلا مئیر تحریک انصاف سے ہوگا اس موقع پر فیصل کنٹونمنٹ بورڈ وارڈ8 کے کونسلر ذشان فاروقی نے اپنے خطاب میں کہا کہ کراچی مسائل کا انبار ہے اور ان مسائل کے ہم بھی ذمہ دار ہیں مسائل سے گھرے ہوئے اس معاشرے میں ہم سب کو اپنے اپنے طور پر کوشش کرنی ہو گی تبھی ہمارے مسائل حل ہو سکتے ہیں پاکستان کو بنے ہوئے بہتر سال ہوگئے اور ہم آج بھی پانی جیسی بنیادی سہولت سے محروم ہیں سیوریج سسٹم ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے سڑکیں ناکارہ کھیل کے میدانوں پر قبضہ مافیا سرگرم ہے تعلیمی نظام تباہ ہو چکا ہے ذمہ دار اداروں میں نااہل افراد کا قبضہ ہے عوام تمام ٹیکس دینے کے باوجود چکی کے دو پارٹ میں پس رہی ہے اور عام معصوم عوام ہر بار اس امید پر اپنے نمائندوں کو ووٹ دیتے ہیں کہ شاید آئندہ ہمارے مسائل حل ہو جائیں گے بس وہ تو تمام مسائل کا انبار ایک ووٹ کی صورت میں اپنے منتخب نمائندے کی جھولی میں ڈال دیتا ہے اب علاقہ ایم پی اے کا کام گٹر بنانا یا گھر گھر پانی پہنچانا تو نہیں ہے ان کا کام تو اسمبلی میں قانون سازی یے تاکہ آپ کے مسائل حل کیے جائیں لیکن لوگ سمجھتے ہی نہیں ہیں ہمیں اپنی ذمہ داریوں کو بھی پورا کرنا چاہیے آج یہ واٹر فلٹر پلانٹ اقرا کمپلیکس میں لگ گیا ہے علاقے کے مکینوں کو پینے کا صاف پانی ملے گا اس پلانٹ کی حفاظت کرنا بھی ہماری ذمہ داری ہے تقریب میں سینئر نائب صدر میر بلال احمد کمپلین ہیڈ انور قریشی انفارمیشن سیکریٹری سعد علی بلوچ ،طلحہ جاوید، شہزاد بلوچ ثاقب عمر، شیراز ،فاروق ، نوید مینگل عارف ، علی قریشی، یاسراحمد اور علاقے کے معززین کی بڑی تعداد موجود تھی. 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر