کلفٹن کے مکینوں کیلئے ڈی سیلینیشن پلانٹ لگانے کا اعلان

کلفٹن کے مکینوں کیلئے ڈی سیلینیشن پلانٹ لگانے کا اعلان

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)کلفٹن کے مکینوں کو ان کی دہلیز پر پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لیے کنٹونمنٹ بورڈ کلفٹن (سی بی سی)نے ساحل سمندر پر ڈی سیلینیشن پلانٹ لگانے کا اعلان کیا ہے۔ لگ بھگ 4 ارب روپے مالیت کے اس منصوبے کے لیے ٹینڈر جاری کردیے گئے ہیں۔کنٹونمنٹ بورڈ کلفٹن کے نائب صدر عزیز سہروردی نے کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ ڈی سیلینیشن پلانٹ سے ابتدائی مرحلے میں یومیہ 50 لاکھ گیلن پانی حاصل ہوگا جو کلفٹن کی 70 فیصد رہائشی آبادی کو فراہم کیا جائیگا جس کے بعد اس منصوبے میں مرحلہ وار توسیع کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت کنٹونمنٹ بورڈ کلفٹن کے تحت آبادیوں میں پینے کے پانی کی سرکاری سطح پر فراہمی بند ہے، جس کے لیے وہ یہ اقدام اٹھانے پر مجبور ہیں۔عزیز سہروردی نے بتایا کہ پلانٹ لگانے کے لیے زمین پاک فوج نے فراہم کر دی ہے جس کے لیے انہوں نے کور کمانڈر کراچی، اسٹیشن کمانڈر کراچی، ایڈمنسٹریشن ڈی ایچ اے، منتخب ممبران اور خاص طور پر سی بی سی کے ایگزیکٹو آفیسر رانا کاشف شہزاد کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ ان تمام لوگوں کے تعاون سے ڈی سیلینیشن پلانٹ لگایا جارہا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں ساحل سمندر پر واقع شہروں میں ڈی سیلینیشن پلانٹ لگائے جاتے ہیں۔ اس سلسلے میں انہوں نے پاکستان کی قریبی خلیجی ریاستوں کا خاص طور پر تذکرہ کیا جہاں ڈی سلینیشن کے ذریعے ضرورت سے زائد پانی حاصل کیا جا رہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ اس منصوبے سے کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ پینے کے پانی کی فراہمی میں خود کفیل ہوجائے گا اور ٹینکر مافیا سے نجات ملے گی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر