سعودی شہرریاض میں یمن حکومت اور باغیوں کے درمیان شراکت اقتدار کے معاہدے پر دستخط

سعودی شہرریاض میں یمن حکومت اور باغیوں کے درمیان شراکت اقتدار کے معاہدے پر ...

  



ریاض(آئی این پی) یمن میں حکومت اور باغیوں کے درمیان اقتدار کی شراکت کا معاہدہ طے پا گیا۔عرب میڈیا کے مطابق یمن میں حکومت اور باغیوں کے درمیان اقتدار کی شراکت کا معاہدے طے پاگیا ہے، معاہدے پر دستخط ریاض میں ہوئے، معاہدے کو ریاض ڈیل کا نام دیا گیا ہے۔اس موقع پر ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان، یمنی صدر عبدربہ منصور ہادی، جنوبی عبوری کونسل (ایس ٹی سی) کے صدر عیدرس الزبیدی، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان، بعض عرب اور مغربی ممالک کے حکام اور سفرا موجود تھے۔سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے یمن تنازع کے حل کے لیے کوششیں جاری رکھنے کی ہدایت کردی۔ رپورٹ کے مطابق فریقین میں یہ معاہدہ سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کی نگرانی میں مذاکرات کے کئی ادوار کے بعد طے پایا ہے۔یمنی صدر عبدالربو منصور ہادی کی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے درمیان اس سمجھوتے کے تحت ان کی عملداری میں گورنریوں کے درمیان تعاون کو مربوط بنایا جائے گا۔واضح رہے کہ یہ دونوں فریق حوثی باغیوں کے مخالف ہیں اور عرب اتحاد کے شانہ بشانہ اس کے خلاف لڑائی میں شریک ہیں۔اس معاہدے کے اہم نکات کے مطابق سات روز میں یمن کی قانونی حکومت کی جنوبی شہر عدن میں واپسی ہوگی، وزارت داخلہ اور دفاع کے تحت تمام فوجی اداروں کا مجتمع کیا جائے گا اور ایک موثر حکومت قائم کی جائے گی۔دوسری طرف یمن میں حکومت اور باغیوں کے درمیان اقتدار کی شراکت کے طے پانیوالا ریاض معاہدہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کی یمن کے تذویراتی مفادات، سالمیت اور خود مختاری کے تحفظ کی خواہش کا عکاس ہے، شیخ محمد بن زید کی دستخطی تقریب میں موجودگی یکجہتی اتحاد اور یمن کی جائز حیثیت کیلئے عرب اتحاد کی کوششوں کے سلسلے میں متحدہ عرب امارات کی جانب سے ریاض معاہدے کی مکمل حمایت کا ثبوت ہے،معاہدہ میں ملک کے معاشی استحکام کے حصول کیلئے مالی وسائل کیلئے سخت اقدامات اٹھانے،اخراجات برداشت کرنے اور کنٹرول اور جائزہ کے شعبے میں پارلیمنٹ کا کردار متحرک کرنے پرزوردیاگیا۔ منگل کو ریاض میں یمن حکومت اور باغیوں کے درمیان شراکت اقتدار کے طے پانے والا ریاض معاہدہ کا اعلامیہ جاری کردیاگیا جس میں کہاگیا کہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کا معاہدہ ریاض اس بات کی عکاسی ہے کہ سعودی قیادت یمن کے تعزویراتی مفادات کے تحفظ علاقے کی سالمیت اور خود مختاری کے تحفظ کی خواہاں ہے۔

یمن معاہدہ

مزید : علاقائی