ڈرامہ’میرے پاس تم ہو‘نے مقبولیت میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا

  ڈرامہ’میرے پاس تم ہو‘نے مقبولیت میں سب کو پیچھے چھوڑ دیا

  



لاہور(فلم رپورٹر)ڈرامہ سیریل ’میرے پاس تم ہو‘کے مشہور ڈائیلاگ’دو ٹکے کی لڑکی کے لئے 50 ملین‘کی بازگشت سوشل میڈیا سے نکل کر شوبز انڈسٹری پہنچ چکی ہے اور بے شمار لوگ اس ڈرامے اور ڈائیلاگ پر طرح طرح کے تبصرے کر رہے ہیں۔شوبز سے تعلق رکھنے والی شخصیات کا کہنا ہے کہ اداکار ہمایوں سعید اورعائزہ خان کا مقبول ڈرامہ’میرے پاس تم ہو‘جہاں مقبولیت میں سب کو پیچھے چھوڑتا جارہا ہے وہیں سکرپٹ رائٹر خلیل الرحمان قمر کے ڈائیلاگ’دو ٹکے کی لڑکی‘ نے سوشل میڈیا پر نئی بحث کا آغاز کردیا ہے۔ کئی سوشل میڈیا صارفین اس ڈائیلاگ کو سراہتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ لالچی، خود غرض اوردھوکے باز عورتوں کے ساتھ ایسا ہی ہونا چاہیے جبکہ عورت کے حقوق اور برابری کی بات کرنے والی خواتین اس ڈائیلاگ کو عورت کی توہین قرار دیتے ہوئے خلیل الرحمان قمرپر تنقید کررہی ہیں۔شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے اس بارے میں ملے جلے رد عمل کا اظہار کیا ہے۔اداکارہ ومیزبان ثمینہ پیرزادہ نے سوشل میڈیا پر مشہور ہونے والے اس ڈائیلاگ پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے”دو مردوں نے آپس میں مہوش کی قیمت طے کرلی اور پھر اسے دو ٹکے کا کہہ دیا۔یعنی عورت کی اپنی کوئی مرضی ہے ہی نہیں۔ واہ رے پیدار شاہی ذہن اور سوچ۔“رائٹر فرحت اشتیاق نے بھی سوشل میڈیا پر اس ڈائیلاگ پر تنقید کرتے ہوئے کافی لمبی چوڑی پوسٹ کی ہے۔ انہوں نے معاشرے کے دوہرے معیار کو آئینہ دکھاتے ہوئے لکھا، اگر عورت آدمی کے ساتھ دھوکہ کرے تو کہا جاتا ہے۔ ”دوٹکے کی عورت، بے حیا عورت،لالچی گھٹیا عورت، جہنم میں جائے گی، عورت تو ہے ہی فتنہ، اچھے آدمی کی زندگی تباہ کردی، پورے خاندان کی ناک کٹوادی، جاؤ مرجاؤ مگر واپس مت آنا، دو ٹکے کی عورت“۔شاہد حمید،شان،معمر رانا،مسعود بٹ،پرویز کلیم،میگھا،ماہ نور،قوی خان،لائبہ علی،سہراب افگن،سٹار میکر جرار رضوی،یار محمد شمسی صابری،گلفام،ہانی بلوچ،اچھی خان،ذویا قاضی،مایا سونو خان،ڈیشی راج،عذرا آفتاب،حیدر سلطان اور دیگر کا کہنا ہے کہ جب آدمی عورت کے ساتھ دھوکا کرے تو کہا جاتا ہے”وہ کسی دوسری عورت نے پھنسایا بیچارے کو، معاف کردو غلطی ہوگئی، بہک گیا تھا بیچارا، کالا جادو ہوگیا تھا بیچارے پر، اپنے بچوں کے لئے معاف کرنا پڑتا ہے، دل بھر جائے گا تو واپس تمہارے پاس ہی آئے گا آخر بیوی ہو، ان کی فطرت میں ہی انکار نہیں ہے،آزمائش تھی بیٹی تمہاری، اس کو برا مت بولو شوہر ہے تمہارا، صبر کرلو بیٹی سب ٹھیک ہوجائے گا۔اداکار عمران عباس نے اس ڈرامے کو ماسٹر پیس قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایسے ڈرامے دہائیوں میں بنتے ہیں جو ہمیشہ یاد رکھے جاتے ہیں۔ انہوں نے ڈرامے کے ہدایت کار، مصنف اور اداکاروں کو اتنی بہترین کاوش پیش کرنے پر سراہا۔

مزید : کلچر