حکومت اور گرینڈ ہیلتھ الائنس کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار، سرکاری ہسپتالوں میں ہڑتال جاری 

حکومت اور گرینڈ ہیلتھ الائنس کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار، سرکاری ہسپتالوں میں ...

  



لاہور(این این آئی) گرینڈ ہیلتھ الائنس کی کال پر سرکاری ہسپتالوں میں مسلسل ستائیسویں روز بھی ہڑتال جاری رہی جس کی وجہ سے غریب مریضوں نے مایوس ہو کر ہسپتالوں کے آؤٹ ڈور میں آنا ہی چھوڑ دیا،ان ڈور زمیں بھی سات روز سے جاری ہڑتال کے بعد لواحقین اپنے پیاروں کو نجی ہسپتالوں میں منتقل کرنے اور مہنگا علاج کرانے پر مجبور ہو گئے،حکومت نے مذاکرات کے لئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری کی سربراہی میں پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دیدی۔ تفصیلات کے مطابق ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف قائم کئے گئے اتحاد گرینڈ ہیلتھ الائنس کی کال پر ڈاکٹرز، پیرا میڈیکس اور نرسز نے گزشتہ روز بھی آؤٹ ڈور وارڈز میں ہڑتال جاری رکھی جس کی وجہ سے ہزاروں مریض علاج معالجے کی سہولیات سے محروم رہے۔ حکومت اور الائنس کے درمیان ڈیڈ لاک کی صورتحال بر قرار ہے۔ الائنس کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ حکومت کا رویہ مریضوں کے لئے مشکلات کا باعث بن رہا ہے۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری اعجازاحمد خان جعفرکمیٹی کے کنوینر ہوں گے جبکہ سپیشل سیکرٹر ی صحت، وائس چانسلر فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی،چیف ایگزیکٹو آفیسرز میواور سروسزہسپتال اور سابق ڈی جی ہیلتھ بطور ممبر شامل ہوں گے۔نوٹیفکیشن کے ٹی او آرز میں کہا گیا ہے کہ کمیٹی گرینڈ ہیلتھ الائنس سے مذاکرات کے لئے مکمل بااختیار ہو گی۔

ہڑتال جاری

مزید : صفحہ اول