ٹیکنیکل کالجوں کو پیداواری یونٹ بنانے کیلئے 38آئی ایم سیز قائم

ٹیکنیکل کالجوں کو پیداواری یونٹ بنانے کیلئے 38آئی ایم سیز قائم

  



پشاور(سٹی رپورٹر) خیبر پختونخوا میں ٹیکنیکل کالجوں کوپیداواری یونٹ بنانے کیلئے صوبہ بھر میں 38 آئی ایم سیز قائم کر دی گئیں جبکہ ملک بھر میں سکل فار آل پروگرام کے لئے 10 ارب روپے مختص کر نے کا فیصلہ کیا گیا ہے ٹیوٹا کے مطابق انسٹی ٹیوٹ منیجمنٹ کمیٹیاں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت کام کریں گی جبکہ نیوٹیک نے خیبر پختونخوا ماڈل کو ملک بھر میں لاگو کرنے کا بھی عندیہ دیا ہے۔ اس امر کا انکشاف جی آئی زی کے ٹیوٹ سیکٹر سپورٹ پروگرام اور خیبر پختونخواٹیوٹا کے زیر اہتمام ٹیکنیکل کالجوں کے درمیان انسٹی ٹیوٹ منجمنٹ مقابلوں کے تقریب کے دوران ماہرین فنی تعلیم نے کیا، جس کے مہمان خصو صی وزیر اعلیٰ کے سپیشل سیکرٹری محمد خالق تھے اس موقع پر ایم ڈی کے پی ٹیوٹا سید سجاد علی شاہ،ہدایت اللہ چیئرمین ٹیکنیکل بورڈ،جی آئی زی کے نمائندوں طاہرخان، صہیب فدا تنولی، اشفاق پراچہ و دیگر ماہرین نے اظہار خیال کیا۔ مہمان خصوصی محمد خالق نے کہاکہ صوبائی حکومت فنی تعلیم کو خصوصی توجہ دے رہی ہیں اور وزیر اعلیٰ نے اس حوالے سے خصو صی ہدایات جاری کر رکھی ہیں کہ خصوصی طور قبائلی اضلاع جو حال ہی میں صوبہ کے حصہ بنے ہیں میں روز گار کے مواقع پیدا کرنے کیلئے فنی تعلیم کو فروغ دیا جائے۔قبل ازیں ایم ڈی کے پی ٹیوٹا سید سجاد علی شاہ نے کہا کہ انسٹی ٹیوٹ منجمنٹ کمیٹیاں بنانے کا مقصد سرکاری و پرائیویٹ پارٹنرشپ کے زریعے فنی تعلیمی اداروں کو پیداوری یونٹس میں تبدیل کرنا ہے تاکہ یہاں سے فارغ التحصیل طالب علموں کا باآسانی روز گار مل سکے اور اس مقصد کے لئے صوبہ بھر میں مختلف 38 آئی ایم سیز قائم کردی گئیں جس کا مقصد انسٹی ٹیوٹ کو کمائی کے قابل بنابا ہے اس موقع پر ڈی جی نیو ٹیک ریجنل آفس پشاورڈاکٹر فہیم محمد نے کہا کہ نیوٹیک اس سلسلے میں ٹیوٹا کی بھر پور مدد کر ے گا جبکہ ملک بھر میں کے پی کے ماڈل کو متعارف کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ حکومت نے سکل فار آل پروگرام کے لئے 10 ارب روپے کی خطیر رقم مختص کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کو استعمال میں لانے کے لئے نیوٹیک ملک بھر کے فنی اداروں کیساتھ ملک کر پروگرام بنائے گا اور عنقریب فنی تعلیم ہی سب کی توجہ کا مرکز ہوگی انہوں نے کہاکہ فنی تعلیمی اداروں کو بین الاقوامی اداروں کیساتھ منسلک کیا جائے گا جس کے لئے ٹیوٹا کیساتھ ملکر منصوبہ بندی کی جائے گی اس مقصد کے لئے 50پروفیشنل ماہرین کو تربیت فرام کی جائے گی پروگرام کے آخر میں اعلیٰ کرکارکر دگی پر کالجز کے پرنسپلز میں شیلڈز تقسیم کی گیئں جس میں پشاور جی ٹی ٹی سی نے مختلف کیٹیگریز میں اول اور دوم جبکہ کوہاٹ نے تیسری پوزیشن حاصل جبکہ مقابلوں میں ٹی ٹی سی نوشہرہ، ٹی ٹی سی مانسہرہ،ٹی ٹی سی سوات و ٹی ٹی سی ڈیرہ سمیت سات کالجوں نے حصہ لیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر