بیٹی کو بچاتے زخمی ہونیوالا باپ علاج نہ ہونے پر چل بسا، ہرآنکھ نم ہوگئی

بیٹی کو بچاتے زخمی ہونیوالا باپ علاج نہ ہونے پر چل بسا، ہرآنکھ نم ہوگئی
بیٹی کو بچاتے زخمی ہونیوالا باپ علاج نہ ہونے پر چل بسا، ہرآنکھ نم ہوگئی

  



کراچی(آئی این پی) آوارہ کتے سے بیٹی کو بچانے والا شخص ہسپتال میں طبی امداد نہ ملنے کے باعث ریبیز کا شکار ہوکرجاں بحق ہوگیا۔جناح ہسپتال کی ڈائریکٹر ایمرجنسی ڈاکٹر سیمی جمالی نے بتایا کہ سرجانی ٹا ئون کے 45سالہ محمد سلیم کو چھ ہفتے قبل بیٹی کو بچاتے بچاتے کتے نے کاٹ لیا تھا، وہ گزشتہ ایک ہفتے سے زیرِ علاج تھا، اس کے دونوں ہاتھوں پر کتے کے کاٹنے کے زخم تھے، وہ 6 بچوں کا باپ اور گھر کا واحد کفیل تھا۔

مرحوم کے بھائی عامر نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں میں بروقت ویکسین نہ ہونے کے باعث محمد سلیم کی ہلاکت ہوئی، سندھ گورنمنٹ ہسپتال نیوکراچی اور عباسی شہید ہسپتال لے کر گئے تھے لیکن وہاں اینٹی ریبیز ویکسین نہیں ملی تھی، عباسی اسپتال نے باہر سے ویکسین منگوا کر آدھی خوراک دے کر اسے گھر بھیج دیاتھا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی