یمن کی حکومت اور باغیوں کے درمیان معاہدے پر امریکی صدر بھی میدان میں آگئے

یمن کی حکومت اور باغیوں کے درمیان معاہدے پر امریکی صدر بھی میدان میں آگئے
یمن کی حکومت اور باغیوں کے درمیان معاہدے پر امریکی صدر بھی میدان میں آگئے

  



واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ یمن میں آئینی حکومت اور عدن کی عبوری کونسل کے درمیان سعودی عرب کی میزبانی میں معاہدہ یمنی بحران کے حل کے لیے اچھی شروعات ہے۔

مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ 'ٹویٹر' پر اپنی متعدد ٹویٹس میں صدر ٹرمپ نے الریاض میں طے پائے یمنی معاہدے اوراس کی کامیابی میں سعودی عرب کی خدمات کو سراہا۔ ان کا کہنا تھا کہ الریاض معاہدہ ایک بہت اچھی شروعات ہے۔ امید ہے یمنی بحران کے حل کے لیے مزید محنت اور کوششیں جاری رکھیں جائیں گی۔

منگل کو سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ، یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی اور ابوظہبی کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید آل نھیان کی موجودگی میں یمن کی آئینی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے مابین ریاض معاہدے پر دستخط کی تقریب ہوئی۔بین الاقوامی برادری اور عرب ممالک نے یمن کے استحکام کو برقرار رکھنے کے لیے یمن کی آئینی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے مابین معاہدے تک پہنچنے کے لیے سعودی عرب کی کوششوں کو سراہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی