قومی بچت کی مختلف سکیموں پر منافع کی شرح میں کمی کی وجہ سامنے آگئی

قومی بچت کی مختلف سکیموں پر منافع کی شرح میں کمی کی وجہ سامنے آگئی
قومی بچت کی مختلف سکیموں پر منافع کی شرح میں کمی کی وجہ سامنے آگئی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )سیونگ اکاؤنٹس پر شرح منافع کو 2 اعشاریہ 5 فیصد کمی کے بعد 8 اعشاریہ 20 فیصد کر دیا گیا ہے، قومی بچت کی مختلف سکیموں پر شرح منافع پر کمی کا اطلاق یکم نومبر سے ہوچکا ہے۔

نجی چینل جیو نیوز کے ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے قومی بچت کی مختلف سکیموں پر منافع کی شرح میں کمی کی وجہ سیکنڈری مارکیٹ میں بانڈز پر منافع کی شرح میں کمی ہے۔ ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹ پر شرح منافع 2 اعشاریہ 33 فیصدکمی کے بعد 10 اعشاریہ 68 فیصد کی گئی جب کہ پنشن بہبود فنڈ پر شرح منافع کو 2 اعشاریہ 28 فیصد کمی کے بعد 12 اعشاریہ 48 فیصد کر دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق ریگولر انکم سرٹیفکیٹ پر شرح منافع 2 اعشاریہ 4 فیصد کمی کے بعد 10 اعشاریہ 92 فیصد کی گئی ہے اور سپشل سیونگ سرٹیفکیٹ پر شرح منافع میں ایک اعشاریہ 70 فیصد کمی کے بعد 11 فیصد کردی گئی ہے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد