نوازشریف نے جاتے ہوئے سروسز ہسپتال کے میڈیکل بورڈز کے ڈاکٹرز سے کیا کہا ؟ جانئے

نوازشریف نے جاتے ہوئے سروسز ہسپتال کے میڈیکل بورڈز کے ڈاکٹرز سے کیا کہا ؟ ...
نوازشریف نے جاتے ہوئے سروسز ہسپتال کے میڈیکل بورڈز کے ڈاکٹرز سے کیا کہا ؟ جانئے

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم نوازشریف کو آج 16 روز سروسز ہسپتال میں زیر علاج رہنے کے بعد ڈسچارج کر دیا گیاہے اور وہ جاتی امراءپہنچ گئے ہیں جہاں ان کیلئے میڈیکل یونٹ لگایا گیاہے ، نوازشریف کو شریف میڈیکل کمپلیکس کی ایمبولینس لینے کیلئے ہسپتال میں موجود تھی لیکن انہیں بلٹ پروف گاڑی میں گھر منتقل کیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کو سخت سیکیورٹی میں جاتی امراءمنتقل کیا گیا جبکہ گھر کے باہر ن لیگی کارکنان کی بڑی تعداد نے اپنے لیڈر کو خوش آمدید کہتے ہوئے استقبال کیا ۔ نوازشریف ہسپتال سے جانے لگے تو ان کا میڈیکل بورڈ کے ڈاکٹروں کے ساتھ خوشگوار ماحول میں مکالمہ ہوا۔ نوازشریف نے روانگی کے وقت ڈاکٹرز کا شکریہ اداکیا اور کہا کہ آپ لوگوں نے میرا علاج کیاہے جس پر میں آپ کا مشکور ہوں ، آپ تمام لوگوں سے کسی بہتر وقت میں ملاقات ہو گی ۔

سروسز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے نوازشریف کی تمام رپورٹس شریف میڈیکل کمپلیکس کے ڈاکٹرز اور عملے کے حوالے کیں اور اس حوالے سے میڈیکل بورڈ کے سربراہ ڈاکٹر محمود ایاز کا کہناتھا کہ میڈیکل بورڈ ختم ہوگیا شریف، سٹی کے ڈاکٹر اب نوازشریف کو دیکھیں گے، شریف سٹی میڈیکل ہسپتال سے آئے ڈاکٹروں کو مکمل طورپر بریف کردیا ہے، نوازشریف کے زیر استعمال 12 کے قریب ادویات جاری رکھنے کا مشورہ دیا ہے۔

ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ ڈاکٹر عدنان کی زیر نگرانی شریف میڈیکل سٹی اسپتال نے جاتی امرا میں انتہائی نگہداشت یونٹ قائم کردیا ہے جہاں ڈاکٹرز 24 گھنٹے موجود رہیں گے۔انہوں نے بتایا کہ نوازشریف کے پلیٹیلیٹس کاو¿نٹس کم ہونے کے باعث انہیں انفیکشن کا شدید خطرہ ہے، ڈاکٹرز نے طبی خطرات پرنواز شریف کے لیے گھر پر خصوصی میڈیکل یونٹ بنانے کا کہا تھا، ڈاکٹرز کی ہدایت پر انہیں انتہائی نگہداشت میں رکھا جائے گا جب کہ سابق وزیراعظم کی صحت کی نازک صورتحال پر ڈاکٹرز نے ان سے ملاقاتوں پر بھی مکمل پابندی عائد کردی ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی