ن لیگ نے صدر پاکستان کیخلاف مواخذے کی تحریک لانے کا اعلان کردیا

ن لیگ نے صدر پاکستان کیخلاف مواخذے کی تحریک لانے کا اعلان کردیا
ن لیگ نے صدر پاکستان کیخلاف مواخذے کی تحریک لانے کا اعلان کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما محسن رانجھا نے کہاہے کہ غیر آئینی آرڈیننس جاری کرنے پر ایوان میں صدر عارف علوی کیخلاف مواخذے کی تحریک لائیں گے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“میں گفتگو کرتے ہوئے محسن رانجھا نے کہا کہ اگر حکومت نے الیکشن کمیشن کا مسئلہ حل نہ کیا اور دو ممبران کا تقرر نہ کیا تو الیکشن کمیشن ہی ختم ہوجائے گا اور حکومت بلدیاتی الیکشن ہی نہیں کروا پائے گی ۔

انہوں نے کہا کہ صدر پاکستان نے غیر قانونی طور پر الیکشن کمیشن کے ارکان کی تقرری کا آرڈیننس جاری کرکے آئین کی خلاف ورزی کی ہے اور اب ان کو صدر پاکستان بھی نہیں ہوناچاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے کی تفتیش ہونی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ ن لیگ نے فیصلہ کیاہے کہ صدر کیخلاف مواخذے کی تحریک پیش کی جائیگی۔ ن لیگ نے پارٹی سطح پر یہ فیصلہ کر لیا اوراب دیگر سیاسی جماعتوں سے بھی مشاورت کی جائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے لکھاہے کہ اگر ایک ایم این اے بھی غیر آئینی کام کرے تو اس پر بھی آرٹیکل 6کا اطلاق ہوتاہے یہاں تو بہت سے لوگ اس عمل میں شریک ہیں بلکہ سپیکر قومی اسمبلی بھی شریک ہیں۔

مزید : قومی