حکومت سانحہ کارساز کی تفتیش کرکے حقائق سامنے لائے ڈاکٹرذوالفقار مرزا

حکومت سانحہ کارساز کی تفتیش کرکے حقائق سامنے لائے ڈاکٹرذوالفقار مرزا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے سابق وزیر داخلہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزانے کہاہے کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے سانحہ کارساز دھماکے کا مقدمہ پرویز مشرف، حمید گل، چودھری پرویز الہی کے خلاف درج کیا گیا تھا مگر آصف زرداری نے اس پر کارروائی رکوا دی۔حکومت سانحہ کارساز کی تفتیش کرکے حقائق سامنے لائے۔وہ پیرکو یہاں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کی عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے بات چیت کررہے تھے ۔ڈاکٹر ذوالفقار مرزا نے کہا کہ آج حکومتی دباؤ کے بعد آصف زرداری دبئی میں بیٹھ کر محترمہ کی شہادت کے حوالے سے بیانات دے رہے ہیں ۔ انہیں آج محترمہ کی شہادت کا احساس ہوا ہے۔میں پوچھتا ہوں کہ محترمہ کے ساتھ سانحہ کارساز میں پونے دو سو جیالے شہید ہوئے ان کا کیا ہوا ؟ وہ بھی کسی کے بیٹے ،بھائی اور باپ تھے۔انہوں نے کہاکہ آصف زرداری کو حکومتی دباؤ کے بعد محترمہ کی شہادت کا مقدمہ یاد آیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مارک سیگل کے بیان میں صداقت ہے کہ سانحہ کارساز میں جیمرز کام نہیں کررہے تھے۔ اس وقت میں سکیورٹی چیف تھا۔ذوالفقارمرزانے کہاکہ آصف زرداری نے محترمہ کے خون کا سودا کرکے پانچ سالوں تک اقتدار کے مزے لوٹے اب احتساب ہو گا۔قبل ازیں ڈاکٹرذوالفقارمزراپیرکوڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کی عدالت میں پیش ہوئے۔سیشن جج نے سماعت کے بعد انہیں 200 ساتھیوں سمیت 29اکتوبر کو پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

مزید : علاقائی