کراچی پورٹ ٹرسٹ کی زمینوں پر قابض مافیا کیخلاف سخت کاروائی کرنا ہوگی ،قائمہ کمیٹی

کراچی پورٹ ٹرسٹ کی زمینوں پر قابض مافیا کیخلاف سخت کاروائی کرنا ہوگی ،قائمہ ...

 اسلام آباد (این این آئی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پورٹس اینڈ شپنگ نے کراچی پورٹ ٹرسٹ کی زمینوں پر قابض مافیا کے خلاف سخت کارروائی کی سفارش کی ہے اور کہا ہے کہ قانون نافذ کر نیو الے ادارے پہلے ہی متحرک ہو چکے ہیں ،وکلاء کو چاہیے کہ وہ بھی کے پی ٹی کے تنازعات حل کر نے کیلئے فعال کر دار ادا کریں ۔کمیٹی کااجلاس گزشتہ روزپارلیمنٹ ہاؤس میں سید غلام مصطفی شاہ کی صدارت میں ہوا جس میں کراچی پورٹ ٹرسٹ کے جاری منصوبوں اور اس کی زمین پر تجاوزات کا جائزہ لیا گیا کے پی ٹی کے چیئر مین نے بتایا کہ یہ ادارے 1887میں قائم کیا گیا تھا جس کا مقصد کراچی کی بندر گاہ کو جدید اور ساز گار بنانے کے ساتھ ساتھ علاقے میں رابطہ کا ذریعہ بنانا تھا ۔کے پی ٹی بڑی قومی بندر گاہ ہے جہاں 60 فیصد قومی تجارت ہوتی ہے اس کا علاقہ 11.5کلو میٹر طویل اور تیرہ میٹر سے زائد گہرا ہے جس کی مجموعی طورپر 33برتھیں ہیں جن میں 30ڈرائی کارگو اور تین مائع کارگو کیلئے استعمال ہوتی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ 6رویہ ایلی ویٹڈ پورٹ ایکسپریس وے بنائی جارہی ہے اس طوالت بارہ سے پندرہ کلو میٹر ہوگی اور اس منصوبے پر تقریباً چالیس ارب روپے لاگت آئیگی انہوں نے بتایا کہ کے پی ٹی کی 780.2ایکڑ اراضی پر قبضہ کیا جا چکا تھا جس میں سے 69ہزار مربع میٹر اراضی واگزار کرالی گئی ہے کمیٹی نے لینڈ مافیا کے خلاف سخت کارروائی کی سفارش کی اور بورڈ آف ریونیو سندھ کو آئندہ اجلاس میں طلب کرلیا تاکہ اراضی پر تجاوزارت کے مسائل حل کئے جاسکیں اجلاس میں سیما محی الدین جمیلی ٗ شاہین شفیق ٗ پیر محمد اسلم بودلہ ٗ خلیل جارج ٗ میر عامر علی خان مگسی ٗ میر اعجاز حسین جاکھرانی سمیت چیئر مین کے پی ٹی اور وزارت کے اعلیٰ حکام شریک ہوئے ۔

مزید : علاقائی