کاشتکار بارانی علاقوں میں چنے کی کاشت شروع کردیں: ماہرین

کاشتکار بارانی علاقوں میں چنے کی کاشت شروع کردیں: ماہرین

لاہور(کامرس رپورٹر)محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان نے چنے کے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ بارانی علاقوں میں چنے کی کاشت شروع کردیں۔ چنا ربیع کی ایک اہم پھلی دار فصل ، غذائیت کے اعتبار سے ایک اہم جنس اور گوشت کا نعم البدل ہے ۔ پھلی دار فصل ہونے کی وجہ سے یہ ہوا سے نائٹروجن حاصل کر کے اسے زمین میں داخل کرتا ہے ۔ جس سے زمین کی زرخیزی بھی بحال رہتی ہے ۔ پنجاب میں چنے کا تقریبًا 92 فیصد رقبہ بارانی علاقوں میں کاشت کیا جاتا ہے ۔ جس میں زیادہ تر تھل بشمول بھکر،خوشاب، لیہ، میانوالی اور جھنگ کے اضلاع شامل ہیں ۔ ترجمان نے کہا ہے کہ کاشتکار پنجاب کے شمالی اضلاع اٹک اور چکوال میں چنے کی کاشت15 اکتوبر تک، گجرات ، جہلم ،راولپنڈی اور نارووال میں15 اکتوبر سے شروع کر کے 10 نومبر تک، تھل کے علاقہ جات بشمول ،بھکر، جھنگ، خوشاب ، میانوالی اور لیہ میں یکم اکتوبرسے 30 اکتوبر تک اور فیصل آباد، ساہیوال، ملتان، بہاولپور، بہاولنگر اور وسطی پنجاب کے دیگراضلاع کے آبپاش علاقوں میں چنے کی کاشت 15 اکتوبر سے 15 نومبر تک مکمل کرلیں ۔

ترجمان کے مطابق چنا ریتلی، ہلکی میرا یا اوسط درجہ زرخیز زمین میں کاشت کریں ۔ دیسی چنے کی نئی منظور شدہ اقسام پنجاب۔2008، تھل۔2006 ،بھکر2011 اور کابلی چنے کی ترقی دادہ اقسام سی ایم۔ 2008 ،نور۔2009 اور نور۔2013 کا صحت مند بیج استعمال کریں ۔

مزید : کامرس