نیب میں 19ڈپٹی ڈائریکٹرزکی براہ راست تقرریوں پر وفاق اور چیئرمین نیب سے جواب طلب

نیب میں 19ڈپٹی ڈائریکٹرزکی براہ راست تقرریوں پر وفاق اور چیئرمین نیب سے جواب ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے نیب میں 19ڈپٹی ڈائریکٹرزکی براہ راست تقرریوں کے خلاف دائردرخواست پر وفاقی حکومت اورچیئرمین نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 4نومبر تک جواب طلب کرلیاہے۔جسٹس عائشہ اے ملک نے یہ نوٹس ڈپٹی ڈائریکٹرنیب ندیم ساجد کی درخواست پر جاری کیا۔درخوست گزار کے وکیل محمداظہر صدیق نے موقف اختیار کیا کہ نیب آزاد اورخود مختارادارہ ہے مگرحکومت جان بوجھ کراس میں سیاسی بنیادوں پر بھرتیاں کرکے اسے متنازعہ بنانا چاہتی ہے۔انہوں نے کہاکہ چیئرمین نیب نے حکومتی ایمااور سیاسی بنیادوں پرنیب میں 9اگست 2015ء کو 19 ڈپٹی ڈائریکٹرزکو براہ راست بھرتی کیا۔انہوں نے کہا کہ سیاسی بھرتیوں کی بناپرنیب کی کارکردگی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ میرٹ پرمحکمانہ ترقیوں کی بجائے19 ڈپٹی ڈائریکٹرز کی براہ راست تعیناتیوں کو کالعدم قراردیاجائے ،عدالت نے نیب میں براہ راست ڈپٹی ڈائریکٹرزکی تقرریوں کے خلاف دائردرخواست پر وفاقی حکومت اورچیئرمین نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 4نومبر تک جواب طلب کرلیاہے۔

مزید : صفحہ آخر