غیر ملکی فنڈز لینے والی جماعت کیخلاف سپریم کورٹ میں ریفرنس بھیجا جا سکتا ، دانیال عزیز

غیر ملکی فنڈز لینے والی جماعت کیخلاف سپریم کورٹ میں ریفرنس بھیجا جا سکتا ، ...

اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماء دانیال عزیز نے کہا ہے کہ کسی سیاسی جماعت پر غیر ملکی فنڈز لینا ثابت ہو جائے تو سپریم کورٹ میں اس کے خلاف ریفرنس بھیجا جا سکتا ہے، پی ٹی آئی کے جلسوں کے وقت بیرون ممالک سے فنڈنگ بڑھ جاتی ہے، پی ٹی آئی کو امریکی اور انڈین فنڈنگ کرتے ہیں۔نجی ٹی وی سے گزشتہ روز گفتگو کرتے ہوئے دانیال عزیز نے کہا کہ پی ٹی آئی کو فنڈنگ کرنے والے امریکہ اور بھارت کے رہائشی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کیلئے فنڈنگ کرنے والا اندردوسانجھ نامی کوئی پاکستانی نہیں بلکہ بھارتی شہری ہے اور وہ چندی گڑھ کا رہائشی ہے، پی ٹی آئی کو فنڈنگ کرنے والوں کی اکثریت کارپوریشنز کی ہے اور آئین کے تحت کوئی بھی پارٹی کارپوریشنز سے پیسہ نہیں لے سکتی۔ انہوں نے کہا کہ اگر وفاقی حکومت تحریک انصاف کی غیر ملکی فنڈنگ ثابت ہونے پر عدالت سے رجوع نہیں کرتی تو یہ آئین کی خلاف ورزی ہو گی۔اس موقع پر نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء شوکت یوسفزئی نے کہا کہ پاکستانی سکھ خاتون کی جانب سے خریدی گئی یہودی فرم نے پی ٹی آئی کو فنڈز دیئے ہیں، جس کی وجہ سے پی ٹی آئی پر غیر ملکی فنڈنگ لینے کا الزام لگایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی منی لانڈرنگ کی تحقیقات کیوں نہیں کرائی جاتیں، متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماء میاں عتیق نے کہا کہ آئین کے تحت کسی بھی کمپنی کا فنڈ پارٹی کو دینا غیر قانونی ہے۔

مزید : صفحہ آخر