اطلاعات تک رسائی کا قانون، نفاذو ترویج میں پنجاب بازی لے گیا

اطلاعات تک رسائی کا قانون، نفاذو ترویج میں پنجاب بازی لے گیا

لاہور (پ ر)پلڈاٹ نے پاکستان میں وفاقی اور صوبائی سطح پر اطلاعات تک رسائی کے قانون، اس کے نفاذ اور ترویج کے لئے کئے گئے اقدامات کے حوالے سے ابتدائی تقابلی سکور کارڈ جاری کیا ہے، جس کے نتائج کے مطابق پنجاب نے 400 میں سے 191 پوائنٹ حاصل کرکے وفاق اور صوبوں میں پہلی پوزیشن حاصل کی ہے۔ پنجاب ٹرانسپرنسی اینڈ رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ 2013ء اور اس کے تحت قائم کردہ پنجاب انفارمیشن کمیشن کو مجموعی طور پر 47.8 فیصد کے تناسب سے پوائنٹ ملے جبکہ خیبرپختونخوا 400 میں سے 178 پوائنٹ حاصل کرکے دوسرے نمبر پر رہا۔ جس کا مجموعی تناسب 44.5 فیصد ہے۔ پلڈاٹ کی طرف سے اطلاعات تک رسائی کے قانون کے نفاذ، سرکاری اداروں میں اس کے اطلاق، انفارمیشن کمیشن یا متلعقہ محکموں میں قانون کی ترویج اور اس قانون کے نفاذ و ترویج کے لئے انفراسٹرکچر اور وسائل کی فراہمی کو بنیاد بنا کر سکور کارڈ تیار کیا گیا، جس کے ذریعے وفاق اور چاروں صوبوں میں عوامی سطح پر میسر آنے والے ڈیٹا کی بنیاد پر اطلاعات تک رسائی کے قانون کا مکمل جائزہ لیا گیا، جس کے نتائج بھی نہایت احتیاط کے ساتھ تیار کئے گئے۔ سکور کارڈ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ خیبر پختونخوا میں رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ چار نومبر 2013ء کو منظور کئے کے باوجود رولز آف بزنس کے بغیر چلایا جا رہا ہے۔

مزید : صفحہ اول