الیکشن کمشن کا اہم اجلاس ،ضمنی انتخابات کی کڑی نگرانی کا فیصلہ

الیکشن کمشن کا اہم اجلاس ،ضمنی انتخابات کی کڑی نگرانی کا فیصلہ

لاہور(آئی این پی، اے این این) چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار رضا خان کے زیر صدارت اجلاس میں ضمنی انتخابات کی کڑی نگرانی کا فیصلہ کیا گیا ہے‘ صوبائی الیکشن کمیشن اور اسلام آباد میں کنٹرول روم قائم کیا جائے گا‘ چیف الیکشن کمشنر خود انتخابات کی نگرانی کریں گے ‘ انہوں آئی جی پنجاب سے ضمنی اور بلدیاتی انتخابات کے سکیورٹی پلان مانگ لیا۔ اجلاس میں صوبائی الیکشن کمیشن کے علاوہ آئی جی پنجاب ‘ہوم سیکرٹری اور تما م اضلاع کے آر پی اوز اور دیگر حکام نے شر کت کی اجلاس کے دوران لاہور ‘اٹک اور اوکاڑہ میں ہونیوالے ضمنی انتخابات اور بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے آئندہ کی حکمت عملی طے کی گئی اجلاس میں سردار محمد رضانے آئی جی پنجاب سے ضمنی اور بلدیاتی انتخابات کے سکیورٹی پلان مانگ لیا ہے ‘ پنجاب میں ہونے والے ضمنی اور بلدیاتی انتخابات کے لئے مرتب کردہ سکیورٹی پلان کی تمام تفصیلات فراہم کی جائیں۔ حساس قرار دئیے گئے پولنگ اسٹیشنز اور پولنگ اسٹیشنز اور عملے کے ساتھ تعینات اہلکاروں کی مکمل فہرستیں بھی فراہم کی جائیں ۔ آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا نے کہا کہ ضمنی الیکشن کیلیے انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں،چیف سیکریٹری پنجاب خضر حیات گوندل کا کہنا تھا کہ صوبائی مشینری کو غیر جانبدار رہنے کا حکم دیا گیا ہے۔ اے این این کے مطابق الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخابات میں وزیر اعظم اور وفاقی وزراء کے انتخابی مہم میں حصہ لینے کے معاملہ پر سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرنے کا اعلان کیا ہے جبکہ لاہور میں ضمنی انتخابات میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر امیدواروں کو آج ( منگل ) کو طلب کر کے وارننگ بھی دی جائے گی۔چیف الیکشن کمشنر سردار رضا خان نے کہا ہے کہ شفاف بلدیاتی انتخابات کرانا بہت بڑا چیلنج ہے۔ کوشش ہے کہ شفاف انتخابات کرا کے قوم کے سامنے سرخرو ہوں تاکہ کوئی انگلی نہ اٹھا سکے۔ان خیالات کا اظہار سیکرٹری الیکشن کمیشن بابر یعقوب فتح محمد نے چیف الیکشن کمیشنر جسٹس (ر) سردار محمد رضا خان کی سربراہی میں پنجاب میں بلدیاتی اور ضمنی انتخابات کے حوالے سے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ اجلاس میں ضمنی انتخابات کے دوران امیدواروں کی جانب سے بڑے سائز کے بینرز اور پینا فلیکس سے متعلق بات ہوئی صوبائی الیکشن کمشنر آج (منگل) کو امیدواروں کو طلب کر کے ضابطہ اخلاق پر عمل کی ہدایت کریں گے، انہوں کو اعتماد میں بھی لیں گے اور ایک قسم کی وارننگ بھی دیں گے۔ آئی جی پنجاب مشتاق احمد سکھیرانے خاص طور پر چیف الیکشن کمشنر کو یقین دہانی کروائی کہ پولیس الیکشن میں مکمل طور پر غیر جانبدار رہے گی، پولیس کوئی پارٹی نہیں اور اپنا کام پیشہ ورانہ طریقہ سے کرے گی۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا بیلٹ پیپرز کی چھپوائی کا کام فوج کی نگرانی میں شروع ہو چکا ہے پولنگ سٹیشنوں کے اندر بھی تعینات ہوگی اور باہر بھی تعینات، ہمیں ہوم سیکرٹری نے بتایا کہ فوج نے ہر پولنگ سٹیشن پر چار چار سی سی ٹی وی کیمرے فراہم کرنے کا کہا ہے، سیکیورٹی کے حوالے سے ان کو مدد فراہم ہوگی ہم سے اجازت مانگی ہے ہم نے اجازت دے دی ہے ہم نے ہوم سیکرٹری سے کہا ہے کہ فوج کو سی سی ٹی وی کیمرے اور یو پی ایس فراہم کردیں۔ عمومی طورپر چیف الیکشن کمشنر نے صورتحال پر اطمینان کا اظہار کیا بہترتعاون پر آئی جی اور چیف سیکرٹری کا شکریہ ادا کیا ۔ ڈی سی او نے اجلاس کو بتایا کہ ہم بڑے سائز کے بینرز اتار تے ہیں اور امیدوار پھر لگا لیتے ہیں، خلاف ورزی ہورہی ہے، اس پر طے ہوا کہ صوبائی الیکشن کمشنر امیدواروں کو بلا کر واننگ دیں گے۔ سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ فوج میڈیا کی بڑی عزت کرتی ہے ہم فوجی حکام کو پیغام پہنچا دیں گے کہ وہ میڈیا نمائندوں کو اپنی ذمہ داریوں کی انجام دہی سے نہ روکیں الیکشن مہم کے دوران امیدواروں کی جانب سے اخراجات پر ان کو نوٹس دے کر سماعت کریں گے اور جو شواہد سامنے لائیں گے الیکشن کمیشن اس معاملہ پر غور کرے گا ان کا کہنا تھا کہ این اے 122میں اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے جائیں گے سیکرٹری الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ اب تو حکومتی جماعت بھی کہہ رہی ہے کہ الیکشن کمیشن جانبدار رہے اس میں کوئی شک و شبہ نہیں ہونا چاہیے کہ الیکشن کمیشن مکمل طور پر غیر جانبدار ہے، چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں مکمل طور پر غیر جانبدار آئینی ادارہ ہے کہ آئینی ادارے کو پنپنے دیا جائے تاکہ یہ شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کرواسکے۔ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی جانب سے الیکشن کمیشن کو دھمکیاں دینے کے سوال پر سیکرٹری الیکشن کمشنر نے کہا کہ الیکشن کمیشن چونکہ ایک آئینی ادارہ ہے ایک عدالت کے طور پر بھی کام کرتا ہے بہتر ہے کمیشن خود اس چیز پر غور کرے۔ ہمارا فوکس الیکشن عملے کی تربیت ہے ہم خود بھی نگرانی کر رہے ہیں معیار کو بھی دیکھ رہے ہیں۔ ایک سوال پر بابر یعقوب فتح محمد کا کہنا تھا کہ اس مرحلہ پر توقع کرنا کہ ہم بائیو میٹرک نظام لگا دیں گے یہ ممکن نہیں پہلے ہی سیاہی اور ریزاٹ مینجمنٹ سسٹم کی وجہ سے مشکلات کاسامنا کرنا پڑا، 2018ء کے انتخابات کے حوالہ سے مختلف چیزوں کا تجربہ کرنے جارہے ہیںآج (منگل) کو اٹک میں ہونے والے ضمنی انخاب کے موقع پر ہم موبائل کے ذریعہ ٹیکنالوجی کا استعمال کرر ہے ہیں۔ 60پولنگ سٹیشنوں پر سمارٹ فون کے ذریعہ نتائج بھیجے جائیں گے ایک قدم یہ اٹھا رہے ہیں، ہر ی پور میں بائیو میٹرک کا تجربہ ہم کر چکے ہیں، دوبارہ بائیو میٹرک کے کچھ اور تجربے کریں گے پھر اس کے بعد کسی نتیجہ پر پہنچیں گے۔ صوبائی الیکشن کمیشن کے نمائندے کا کہنا تھا کہ لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے وزیر اعظم وفاقی وزراء اور ارکان اسمبلی کو انتخابی مہم میں حصہ لینے کی اجازت دینے کے خلاف ہم سپریم کورٹ میں اپیل دائر کریں گے۔ وفاقی وزراء کے این اے 122میں انتخابی مہم میں حصہ لینے کے معاملہ کو الیکشن کمیشن دیکھ رہا ہے اورہم اس کے خلاف سپریم کورٹ جارہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ضمنی انتخابات میں صرف ایک فیصد اضافی بیلٹ پیپرز چھاپے جائیں گے اور یہ آر او، ضلع اور صوبہ کی سطح پر چیک ہوں گے۔

مزید : صفحہ اول