سابق ایئر چیف مصحف علی میر کو دیا گیا طیارہ خریداری کے وقت ہی ناقص تھا ،آڈٹ حکام

سابق ایئر چیف مصحف علی میر کو دیا گیا طیارہ خریداری کے وقت ہی ناقص تھا ،آڈٹ ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)آڈٹ حکام نے دعویٰ کیاہے کہ سابق ایئر چیف مصحف علی میر کو دیئے جانے والافوکر طیارہ ناقص تھا۔تفصیلات کے مطابق آڈٹ حکام نے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کو رپورٹ پیش کی ہے جس میں آڈٹ حکام نے دعویٰ کیاہے کہ سابق ایئر چیف مصحف علی میر کو دیئے جانے والا فوکر طیارہ 1991میں خریدا گیا اور یہ خریداری کے وقت ہی ناقص حالت میں تھا جبکہ 1993میں اس طیارے کو معائنے کے بعد مشکوک قرار دیا گیاتھا اور 1996میں اس طیارے کو پی آئی اے کو دینے کی کوشش کی گئی لیکن پی آئی اے نے اس طیارے کو لینے سے انکارکر دیاتھا۔20فروری 2003کو اس طیارے میں سابق ایئر چیف مصحف علی میر پاکستان ایئر فورس بیس کوہاٹ کے یونٹ پی ٹی ٹی ایس (پری پریڈ ٹریننگ سکول)کی سالانہ انسپکشن پرجار رہے تھے طیارہ فنی خرابی کے باعث کوہاٹ کے قصبہ گھمبٹ میں گر کر تباہ ہو گیا ،طیارے میں ایئر چیف مصحف علی میر ،ان کی اہلیہ اور پاکستان ایئر فورس کے اعلیٰ افسران سمیت 17 جوان شہید ہو گئے تھے ۔پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے آڈٹ حکام کو تین ماہ میں تحقیقات مکمل کر کے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیاہے۔

مزید : صفحہ اول