دھمکیوں کے باوجود دہشتگردوں کو سزا دلوانا پولیس کی بہادری کا منہ بولتا ثبوت ہے ،ناصر درانی

دھمکیوں کے باوجود دہشتگردوں کو سزا دلوانا پولیس کی بہادری کا منہ بولتا ثبوت ...

پشاور( کرائمز رپورٹر)انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان دُرانی نے آج سنٹرل پولیس آفس پشاور میں منعقدہ ایک تقریب میں بہترین پیشہ ورانہ تفتیش پر پشاور اور خطرناک اشتہاری مجرم کو بمعہ اسلحہ گرفتار کرنے پر مانسہرہ کے پولیس آفسروں و جوانوں کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔ تفصیلات کے مطابق چند مہینے قبل پہاڑی پورہ پولیس اور بھتہ خوری اور دہشت گردوں کے مابین ایک مقابلہ ہواتھا جس میں ایک پولیس کانسٹیبل یاسر اور دو بھتہ خور ملزمان ریاض عرف بڈھ بیر اور معمور عرف معمورے ہلاک ہو چکے تھے جبکہ ایک دہشت گرد نصیر احمد عرف نذیر احمد کو زندہ گرفتار کرکے اُن سے 30بور پستول اور کارتوس برآمد کئے تھے۔ گرفتار دہشت گرد بھتہ خوری اور دہشت گردی کے ایک درجن سے زائد مقدمات میں مطلوب تھا اور مختلف مواقع پر مختلف واقعات میں 4 سپاہیوں کو شہید کر چکا تھا۔ گرفتاری کے بعد وہ پولیس کو مسلسل دھمکیاں دے رہا تھا اور کیس کی پیروی کرنے پر خطرناک نتائج کی دھمکیاں دے رہا تھا۔ تاہم پہاڑی پورہ پولیس اسٹیشن کے تفتیشی افسروں نے دہشت گرد کی دھمکیوں کی کوئی پروانہ کی اور جدید اور سائنسی خطوط پر تفتیش کرتے ہوئے مقدمے کا چالان عدالت میں پیش کیا اور انسداد دہشت گردی کی عدالت سے ملزم کو عمر قید ، 16 سال قید با مشقت اور تین لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنوائیں۔ اسی طرح مانسہرہ پولیس نے ایک خفیہ اطلاعات پر کاروائی کرتے ہوئے قتل ، اقدام قتل، ڈکیتی اور اغوا برائے تاوان کے 38سنگین مقدمات میں مطلوب اشتہاری ملزم صابر عرف صابرہ کو گرفتار کرکے اُن سے ایک عدد کلاشنکوف اور لوڈشدہ میگزین برآمد کیا تھا۔ آئی جی پی نے دونوں واقعات میں پولیس کی بہترین پیشہ ورانہ تفتیش اور جان ہتھیلی پر رکھ کر کاروائیوں کی تعریف کی اور کہا کہ معیاری تفتیش سے ہی پولیسنگ کے اعلیٰ معیار کو قائم کرکے مظلوموں کی داد رسی کو یقینی بنایا جاسکتاہے۔آئی جی پی نے کہا کہ دہشت گردوں کی جانب سے دھمکیوں اور سنگین نتائج بھگتنے کے باوجود دہشت گرد کو قرار واقعی سزا دلوانا تفتیشی آفسروں کی بہادری، دلیری اور پیشہ ورانہ کمٹمنٹ کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ آئی جی پی نے مانسہرہ پولیس کی بروقت ایکشن اور بہادری کو سراہتے ہوئے کہا کہ پولیس کی کامیاب کاروائی سے علاقے کے عوام کا اعتماد پولیس پر مزید بڑھ گیا ہے ۔ اور جرائم پیشہ افراد کو جرائم سے توبہ کرنے کا ایک واضح پیغام مل چکا ہے۔ اس موقع پر آئی جی پی نے پشاور اور مانسہرہ کے پولیس آفسروں و جوانوں کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔جن میں پشاور پولیس کے تفتیشی آفسر اے ایس آئی ساجد خان اور مانسہرہ پولیس کے ڈی ایس پی اوگئی محمد سلیمان ، سب انسپکٹر ایس ایچ اُو پھلڑا محمد فاروق اور کانسٹیبل مشتاق شامل تھے۔

مزید : پشاورصفحہ اول