ممتازقادری کی سپریم کورٹ پیشی،جڑواں شہروں میں سکیورٹی کے سخت انتظامات

ممتازقادری کی سپریم کورٹ پیشی،جڑواں شہروں میں سکیورٹی کے سخت انتظامات

اسلام آباد (کرائم رپورٹر)ممتاز قادری کی سپریم کورٹ میں پیشی کے موقع پر ریڈ زون میں پولیس کی کوئیک رسپانس فورس کی کاروائی نے پولیس افسران کے نفری میں کمی کے بہانے کا پول کھول دیانادرا چوک میں سپریم کورٹ میں داخل ہونیکی کوشش کرنے والوں کو کوئیک رسپانس فورس نے گھیر لیا تفصیلات کے مطابق وفاقی دارلحکومت میں پیر کے روز سابق گورنر پنجاب قتل کیس کے مرکزی ملزم ممتاز قادری کی پیشی کے موقعہ پر سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے جیل سے سپریم کورٹ تک کے راستے پر پولیس لائن سے اضافی نفری بلا کر روڈ کے دونوں اطراف کی سخت نگرانی کی گئی اس دوران جڑواں شہروں کی ٹریفک پولیس نے بھی سخت ڈیوٹی سر انجام دی اس شہر اقتدار میں ستر سے زائد پولیس ناکوں پر رینجرز کے چاک وچابند دستوں کو تعینات کیا گیا اس کے باوجود بھاری اکثریت میں لوگ ریڈ زون میں داخل ہونے میں کامیاب ہوگئے جس سیپولیس افسران کی دوڑیں لگ گئی اور پولیس نے ریڈ زون کو مکمل طور پر سیل کر دیا اور پولیس کی کوینک رسپانس فورس نے ریڈ زون میں پہنچنے کی کوشش میں ستہر افراد کو گرفتار کر لیا پولیس کے ذمہ دار افسر نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر روزنامہ پاکستان کے استفسار پر بتایا کہ تیس افراد کو نادرا چوک سے گرفتار کرکے تھانہ سیکرٹیریٹ منتقل کردیا گیاتھانہ آبپارہ کے علاقے سے بھی گجرانوالہ سے آنے والے چالیس افراد گرفتار کیا گیا ہے ریڈ زون میں دفعہ ایک سو چوالیس نافذ ہے جس کے تحت کسی قسم کے جلسے یا ریلی پر پابندی ہیاس دوران سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات سے پولیس کے شہروں کو سیکورٹی فراہم کرنے کے حوالے سے نفری میں کمی کے رونے دونے کا بھی پول کھل گیا

مزید : ملتان صفحہ اول