چارسدہ میں معصوم طالب علم کے قتل کا ڈراپ سین

چارسدہ میں معصوم طالب علم کے قتل کا ڈراپ سین

چارسدہ (بیورورپورٹ) ترلاندی میں نجی سکول کے چوتھے جماعت کے طالب علم کے قتل کا ڈراپ سین ۔سگے بھائی نے بھائی کا گلہ کاٹ کر نعش کھیتوں میں پھینک دیا تھا ۔ تفصیلات کے مطابق ہفتہ کے روز تھانہ نستہ کے حدود ترلاندی میں نجی سکول کے چوتھے جماعت کے طالب علم 14سالہ بسم اللہ جان ولد محمد سید کو نامعلوم ملزمان نے گلہ کاٹ کر قتل کر دیا تھا اور اس حوالے سے اس کے والد نے میڈیا کو بتایا کہ چار نقاب پوش ملزمان نے ان کے بیٹے بسم اللہ جان کو قتل کر دیا جبکہ دوسرے بیٹے سیف اللہ جان کو تشدد کا نشانہ بنایا ۔واقعہ کی حساسیت کے پیش نظر ایس پی انوسٹی گیشن پیر شہاب اور ماہر تفتیشی ٹیم نے اسی روز جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کئے اور تفتیش کا دائرہ وسیع کر کے گزشتہ رات مقتول بسم اللہ جان کے بھائی سیف اللہ جان کو گرفتار کرکے ان سے تفتیش شروع کر دی ہے ۔ انوسٹی گیشن ٹیم کے انچارج بہار علی نے رابطہ کرنے پر بتایا کہ ملزم سے تفتیش جاری ہے اور عنقریب واقعہ میں ملوث دیگر ملزمان بھی قانون کے کٹہرے میں ہو نگے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر