35لاکھ سال پرانے جراثیموں کا انجکشن لگانے والا شخص ،وجہ انتہائی دلچسپ

35لاکھ سال پرانے جراثیموں کا انجکشن لگانے والا شخص ،وجہ انتہائی دلچسپ
35لاکھ سال پرانے جراثیموں کا انجکشن لگانے والا شخص ،وجہ انتہائی دلچسپ

  

ماسکو(نیوزڈیسک)اس دنیا میں لافانی زندگی کے حصول کے لئے انسان کچھ بھی کرنے کو تیار ہوجاتا ہے اور ایسا ہی کچھ ایک روسی سائنسدان نے بھی کیا جب اس نے لمبی عمر کے لئے 35لاکھ سال پرانا جراثیموں کا انجکشن ہی اپنے جسم میں داخل کر لیا۔

مزیدپڑھیں:کوے اپنے مرنے والوں کے جنازے میں شرکت کرتے ہیں، ماہرین کا حیرت انگیز انکشاف

تفصیلات کے مطابق ماسکو سٹیٹ یونیورسٹی کے جیو کریالوجی کے ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ پروفیسر انٹولیابروشکوونے ایک انتہائی قدیم انجکشن لے لیا۔ماہرین کو Bacillus Fنامی ایک لاکھوں سال پرانا جراثیم ملا اور انہوں نے اس کے اثرات جاننے کے لئے شہدکی مکھیوں اور چوہوںمیں یہ داخل کیا۔اس کی وجہ سے ادھیڑ عمر چوہوں کا تولیدی نظام بہتر ہوااور ساتھ ہی اس کے اثرات مثبت ثابت ہوئے۔اس چیزکو دیکھتے ہوئے روسی سائنسدان نے فیصلہ کیا کہ وہ اپنے جسم میں یہ جراثیم داخل کرے گا۔اس نے یہ انجکشن کے ذریعے یہ جراثیم اپنے جسم میں داخل کئے اور اس بات کو دو سال ہوچکے ہیں اور اب تک اسے فلو یازکام نہیں ہوا۔اس کا کہنا ہے کہ ابھی تک وہ کسی بیماری کا شکار نہیں ہوا اور اس کے کام کرنے کی استطاعت بھی بڑھ چکی ہے تاہم ابھی تک اس بات کا تعین نہیں ہوسکا کہ اس کی عمر بھی طویل ہوگی یا نہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس