جے یو پی نورانی گروپ نے این اے 122 میں سردار ایاز صادق کی حمایت کا اعلان کردیا

جے یو پی نورانی گروپ نے این اے 122 میں سردار ایاز صادق کی حمایت کا اعلان کردیا
جے یو پی نورانی گروپ نے این اے 122 میں سردار ایاز صادق کی حمایت کا اعلان کردیا

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)جمعیت علماءپاکستان نورانی گروپ نے این اے 122 لاہور کے ضمنی انتخاب میں ن لیگ کے امیدوار سردار ایازصادق کی حمایت کا اعلان کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق خواجہ سعد رفیق اور میاں حمزہ شہبازشریف کی قیادت میں مسلم لیگ ن کے ایک وفدنے جمعیت علماءپاکستان نورانی گروپ کی قیادت سے ملاقات کی ۔ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جے یوپی کے سیکرٹر ی اویس شاہ نورانی نے ن لیگ کے امیدوار سردارایازصادق کی باضابطہ حمایت کا اعلان کیا ۔

اس مو قع پر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے میاں حمزہ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ حمایت کرنے پر جے یوپی قیادت کے مشکور ہیں۔ہم تعمیروترقی کی سیاست کرتے ہیں، این اے 122 کے الیکشن کے بعد الزامات کی سیاست ہمیشہ کیلئے دفن ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے، کراچی آپریشن شروع کیے جانے کے بعدکراچی کی رونقیں واپس آرہی ہیں۔ وزیر اعظم نے راہداری منصوبے پر تمام جماعتوں کو ایک ساتھ بٹھایا،پاک چائنہ اکنامک کوریڈور خطے میں گیم چینجر ثابت ہوگا۔

وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا میڈیا سے گفتگو کے دوران کہنا تھا کہ بہتام، الزام اور دشنام عمران خان کا ٹریڈ مارک ہے، عمران خان پاکستان کی سیاست کا مزاحیہ کردار بن گئے ہیں،کنٹینر میں بستر گرتا تھا تو موصوف بیان داغ دیتے تھے،عمران خان سیاسی پختگی اختیار نہیں کرتے اس لیے ان کے لیے دعا ہی کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان جب بھی جلسہ کرتے ہیں پی ٹی آئی کا ڈیڑھ دوہزار ووٹ خراب کردیتے ہیں کیونکہ جب وہ ہمیں گالیاں نکالتے ہیں تو یہ بات لاہور کے ووٹر کیلئے ناقابلِ برداشت ہوتی ہے،لاہور کے ووٹر نازیبا زبان استعمال کرنے والے کو پسند نہیں کرتے ۔ انہوں نے بتایا کہ ضمنی الیکشن کیلئے جماعت اسلامی کے ساتھ بھی مکمل رابطہ ہے۔

جے یو پی کے جنرل سیکرٹری اویس شاہ نورانی کا کہنا تھاکہ پنجاب میں دوسرے صوبوں کی نسبت زیادہ ترقی ہورہی ہے ملک و قوم کے مفاد میں کام کرنے والوں کا ساتھ دیا جائے گا۔ضمنی الیکشن میں ہمارے کارکن ن لیگ کے شانہ بشانہ کھڑے ہونگے،امید ہے این اے 122 سے ایاز صادق جیت جائیں گے اور پہلے سے زیادہ ووٹ لے کر اسمبلی میں واپس جائیں گے۔

مزید : لاہور /اہم خبریں