سانحہ منیٰ ،75پاکستانی شہید ،47زخمی ،28لاپتہ ،ہائی کورٹ میں رپورٹ پیش کردی گئی

سانحہ منیٰ ،75پاکستانی شہید ،47زخمی ،28لاپتہ ،ہائی کورٹ میں رپورٹ پیش کردی گئی
 سانحہ منیٰ ،75پاکستانی شہید ،47زخمی ،28لاپتہ ،ہائی کورٹ میں رپورٹ پیش کردی گئی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )وفاقی وزارت مذہبی امور نے سانحہ منیٰ میں متاثرہ پاکستانیوں کی مصدقہ تفصیلات لاہورہائیکورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک کی عدالت میں پیش کر دیں،رپورٹ میں بتایاگیا ہے کہ سانحہ میں75 پاکستانی شہید ،47زخمی ہوئے جبکہ 28 ابھی تک لاپتہ ہیں۔فاضل عدالت نے درخواست گزار کو جواب الجواب داخل کروانے کی ہدایت کرتے ہوئے مزید سماعت8اکتوبر تک ملتوی کر دی ۔درخواست گزار عارف ادریس نے موقف اختیار کیا کہ جدہ میں پاکستانی قونصل خانے کی جانب سے سانحہ منیٰ کے شہدا کی اصل تعداد چھپائی جا رہی ہے۔ عالمی میڈیا 286پاکستانیوں کے شہید ہونے کی اطلاعات فراہم کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا سانحہ منی کے بعد جدہ میں پاکستانی سفارتی عہدیداروں کی نااہلی کھل کر سامنے آ چکی ہے۔ انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ سانحہ منی کے متاثرہ پاکستانیوں کا تمام ریکارڈ عدالت میں طلب کیا جائے۔ عدالتی حکم پر وفاقی وزارت مذہبی امور نے سانحہ منی کی مصدقہ پورٹ عدالت میں جمع کرا دی۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سانحہ منی میں 75 پاکستانی شہید ہوئے ،47 پاکستانی زخمی ہوئے۔ جن میں سے چالیس پاکستانیوں کی صحت بحال ہونے پر انہیں ہسپتالوں سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ سانحہ منی کے بعد سے اب تک اٹھائیس پاکستانی تاحال لاپتہ ہیں ۔جن کی تلاش کا سلسلہ جاری ہے۔جس پر عدالت نے درخواست گزار کو جواب الجواب داخل کروانے کی ہدایت کرتے ہوئے مزید سماعت8اکتوبر تک ملتوی کر دی ۔

مزید : لاہور