ان میاں بیوی نے ایسا ریکارڈ بناڈالا جسے توڑناناممکن ہوگا

ان میاں بیوی نے ایسا ریکارڈ بناڈالا جسے توڑناناممکن ہوگا
ان میاں بیوی نے ایسا ریکارڈ بناڈالا جسے توڑناناممکن ہوگا

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا میں 100سال سے زائد عمر پانے کی لاکھوں مثالیں موجود ہوں گی مگر 100سالہ شادی شدہ زندگی کی مثال شاید ڈھونڈے سے نہ ملے۔ بھارتی نژاد برطانوی میاں بیوی کرم چند اور کرتاری چند کے پاس دنیا کا طویل ترین شادی جوڑا ہونے کا اعزاز تھا۔ گزشتہ سال دسمبر میں انہوں نے اپنی شادی کی 90ویں سالگرہ منائی تھی۔ گزشتہ روز کرم چند کے انتقال کے ساتھ یہ جوڑی بھی ٹوٹ گئی ہے۔ کرم چند نے 110سال کی عمر میں وفات پائی ہے جبکہ اس کی اہلیہ کرتاری چند کی عمر اس وقت103سال ہے۔ دونوں کی شادی 1925میں ہندوستان میں ہوئی تھی اور وہ 1965ءمیں برطانیہ منتقل ہو گئے اور بریڈفورڈ میں مقیم تھے۔ ایک ماہ بعد کرم چند کی 111ویں سالگرہ تھی۔

دولہے نے عمومی طور پر شادی کے بعد کیا جانے والا ’کام‘شادی کی تقریب میں ہی کر دیا،شرکاءکی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ گئیں

انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق کرم چند اور کرتاری کے 8بچے ہیں جن میں 4بیٹے اور 4بیٹیاں شامل ہیں۔ اس وقت ان کے 27پوتے پوتیاں اور 23پڑپوتے پڑپوتیاں ہیں۔ ان کے بچوں کا کہنا ہے کہ ”ہمارے ماں باپ نے زندگی میں کبھی ایک دوسرے سے جھگڑا نہیں کیا۔ انہوں نے ہمیشہ ہر کام میں ایک دوسرے کو سہارا دیا۔“ کرتاری چند، جو آئندہ ماہ104سال کی ہو جائیں گی، کا کہنا تھا کہ ”طویل عرصے تک شادی شدہ زندگی گزارنا ایک نعمت تھا۔ اب وہ چلے گئے ہیں۔ میں اگلے جہان میں ان کی آرام دہ زندگی کے لیے دعا کروں گی۔“

ان کے بیٹے ہربجن داس کا کہنا تھا کہ ”میرے والد اکثرکہا کرتے تھے کہ یہ خوشی اور اطمینان ہی ہے جس کے باعث میں نے اتنی طویل اور خوبصورت زندگی گزاری ہے۔“ہربجن نے اپنے والد کے کھانے کی عادت کے متعلق بتاتے ہوئے کہا کہ ”وہ صبح ساڑھے 6بجے ہی ناشتہ کرلیا کرتے تھے۔ پھر لنچ اور ڈنر میں 2روٹیاں کھاتے تھے۔ وہ روزانہ ایک سیب لازمی کھاتے تھے۔ اس عمر میں بھی ان کی بینائی بالکل ٹھیک تھی، وہ بغیرچشمے کے روزانہ پنجابی کی کتابیں پڑھا کرتے تھے۔ وہ زیادہ پڑھے لکھے نہیں تھے لیکن پنجابی پڑھ لیتے تھے۔“ واضح رہے کہ کرم چند اور کرتاری چند کا تعلق بھارتی شہر جالندھر کے گاﺅں کراری سے تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس