آسٹریلوی عدالت قتل کا ایک ایسا مقدمہ سننے لگی کہ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے

آسٹریلوی عدالت قتل کا ایک ایسا مقدمہ سننے لگی کہ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے
آسٹریلوی عدالت قتل کا ایک ایسا مقدمہ سننے لگی کہ جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے

  


کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا کے شہر میلبرن کی ایک عدالت میں ایک ایسا حیران کن مقدمہ زیرسماعت ہے جس کے متعلق جان کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ اے بی سی نیوز کی رپورٹ کے مطابق یہ مقدمہ 3گونگے بہرے اور ذہنی معذور افراد کے خلاف درج کیا گیا ہے جو ایک شخص کے قتل کی منصوبہ بندی میں ملوث پائے گئے ہیں۔ ان تینوں ملزمان کے نام جارجیا فیلڈز، جیک فیئریسٹ اور واروک ٹوہے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق رابرٹ رائٹ نامی ایک شخص 15جنوری 2015ءکو اپنے گھر کی دوسری منزل سے بالکونی سے گرکر ہلاک ہو گیا تھا۔ اس کے سر میں گہری چوٹ آئی تھی جس سے اس کی موت واقع ہوئی۔ پولیس کو شبہ تھا کہ اس شخص کو بالکونی سے دھکا دے کر قتل کیا گیا ہے۔

بھارتی خاتون نے بیٹے کی خاطر اپنی بیٹی کے ساتھ ایسی حرکت کرڈالی کہ جان کر آپ سکتے میں آجائیں گے

تحقیقات میں ان تین ملزمان کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب پولیس کے ہاتھ ایک سی سی ٹی وی فوٹیج لگی جس میں ان تینوں کو قتل کی منصوبہ بندی کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔پراسیکیوٹر نے عدالت میں بتایا ہے کہ ”تینوں ملزمان کو رابرٹ کی موت سے کچھ ہی دیر قبل عمارت کے داخلی راستے اور لفٹ میں اشاروں کی زبان میں قتل کی منصوبہ بندی کرتے ہوئے سی سی ٹی وی کیمرے کی مدد سے دیکھا گیا ہے۔ اشاروں میں فیلڈز اپنے ساتھی فیئریسٹ سے پوچھتی ہے کہ ”تم اسے کیسے مارو گے؟“ فیئریسٹ جواب دیتا ہے کہ ”گلہ گھونٹ کر۔“ اس پر ٹوہے اشاروں میں کہتا ہے کہ ”گلہ دبا کر مارنا خطرناک ہے، بلندی سے گرا کر مارنا اچھا ہے۔“مقدمے کی سماعت جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس