قائد اعظم پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانا چاہتے تھے،صفدر محمود

قائد اعظم پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانا چاہتے تھے،صفدر محمود

لاہوراپنے خبر نگار سے) قائداعظمؒ پاکستان کو ایک اسلامی جمہوری فلاحی ریاست بنانے کے خواہاں تھے۔ اس ملک پر اللہ تعالیٰ کا سایہ ہے اور یہ تاقیامت قائم ودائم رہے گا۔ ان خیالات کا اظہارممتاز محقق،دانشور وکالم نگار ڈاکٹر صفدر محمود نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان ،شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں ’’کاروان خیر سگالی و قومی یکجہتی ‘‘کے تحت ملک بھر سے آئے ہوئے طلبا و طالبات اور اساتذۂ کرام کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر معروف صنعتکاراور سارک چیمبر آف کامرس کے نائب صدر افتخار علی ملک، چوہدری نعیم حسین چٹھہ، رحمت اللہ جاوید اور نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے سیکرٹری شاہد رشید بھی موجود تھے ۔ گلگت بلتستان سے آئے طالبعلم سہیل اختر نے تلاوت کلام پاک جبکہ آزادکشمیر کے طالبعلم ولی اعجاز قریشی نے بارگاہ رسالت مآبؐ میں ہدیۂ عقیدت پیش کیا۔ پروگرام کی نظامت کے فرائض عثمان احمد نے انجام دیے۔ڈاکٹر صفدر محمود نے کہا کہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ مبارکباد کا مستحق ہے کہ اس نے کاروان خیر سگالی و قومی یکجہتی کے ذریعے ملک بھر سے ہونہار طلبا وطالبات کو یہاں مدعو کیا، اس کی قومی حوالے سے بڑی اہمیت ہے اور یہ قومی یکجہتی کی جانب انتہائی اہم قدم ہے۔ لاہور آپ سب کا شہر ہے۔یہاں موجود بچوں کے خیالات سن کر میرے جذبوں کو بھی ہمت ملی ہے۔ آپ محنت کی عادت اپنائیں کیونکہ محنت کا کوئی نعم البدل نہیں اور کامیابی کیلئے محنت اولین شرط ہے۔آپ مطالعہ کی عادت ڈالیں ،میں نے اپنی زندگی میں کتاب سے زیادہ وفادار کوئی چیز نہیں دیکھی ٹ کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ قانون کی حاکمیت کو یقینی بنایا۔آج بعض عناصر یہ پروپیگنڈہ کرتے ہیں کہ قائداعظمؒ سیکولر سٹیٹ کے خواہاں تھے وہ بالکل بے بنیاد اور غلط ہے۔ قیام پاکستان سے قبل 101اور قیام پاکستان کے بعد بحیثیت گورنر جنرل 14بار قائداعظمؒ نے فرمایا پاکستان ایک اسلامی مملکت ہو گی جس کی بنیادیں اسلامی اصولوں پر مبنی ہوں گی۔قائداعظمؒ وقت کی قدر اور پابندی کیا کرتے تھے۔ افتخار علی ملک نے کہا کہ یہ ملک بڑی قربانیوں کے بعد حاصل کیا گیا ہے لہٰذا اس کی قدر کریں اور پاکستان کی تعمیروترقی میں اپنا کردار ادا کریں۔ نئی نسل ہی پاکستان کا مستقبل ہے ۔ آپ بزرگوں کی عزت اور اپنے والدین کے فرمانبردار بنیں ۔ اساتذۂ کرام کا ادب و احترام کریں۔ زندگی میں بغیر محنت کے کامیابی کا ملنا ناممکن ہے۔ پروگرام کے دوران پشاور(خیبر پختونخوا) سے آئے طالبعلم فہد اور کراچی (سندھ) سے آئی ہوئی طالبہ اریبہ نے تقریر،چترال سے آئی طالبات گلشاد اور حمیرا نے ملی نغمہ جبکہ آزادکشمیر سے آئے طالبعلموں نے کلام اقبالؒ پیش کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1